ایکشن پلان پر عملدرآمد کیلئے فرانس پاکستان کا متحرک شراکت دار ہے،وزارت خزانہ

پاکستان نے گزشتہ دو سال میں ایکشن پلان پر موثر، تیز تر عملدرآمد کیا، ہماری کارکردگی کو بین الاقوامی برادری نے بھی سراہا ہے،اعلامیہ

بدھ جون 23:36

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 23 جون2021ء) وزارت خزانہ نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) سے متعلق خبروں پر وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایکشن پلان پر عملدرآمد کے لیے فرانس پاکستان کا متحرک شراکت دار ہے، فرانس نے ایکشن پلان کے لیے پاکستان کو رہنمائی، تکنیکی تعاون فراہم کیا۔ وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نے ایکشن پلان پر عملدرا?مد کے لیے سیاسی سطح کی یقین دہانی کرائی۔

وزارت خزانہ کے مطابق پاکستان نے گزشتہ دو سال میں ایکشن پلان پر موثر، تیز تر عملدرا?مد کیا، پاکستان کی کارکردگی کو بین الاقوامی برادری نے بھی سراہا ہے۔ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ میڈیا فیٹف سے متعلق قیاس ا?رائیوں، نامکمل خبروں سے اجتناب کرے، قیاس ا?رائی پر مبنی خبروں سے عالمی تعاون کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔

(جاری ہے)

وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ پاکستان سے متعلق فیٹف کا فیصلہ 25 جون کے پلینری اجلاس کے بعد ہوگا۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ پاکستان نیایف اے ٹی ایف کے 26پوائنٹس پر پیش رفت مکمل کرلی ہے ، فیٹف ایکشن پلان کیتحت 27پوائنٹس پرعملدرآمدکیلئے کہا گیا تھا۔خیال رہے گزشتہ میٹنگ تک پاکستان نے 24 نکات پر عملدرآمدکیا تھا ، جون 2018 میں ایف اے ٹی ایف نے پاکستان کو اپنی گرے لسٹ میں شامل کیا ، اس سلسلے میں ضروری اقدامات اٹھانے کے لیے پاکستان کو اکتوبر 2019 تک وقت دیا گیا، جس میں بعد میں مزید توسیع کر دی گئی تھی۔

متعلقہ عنوان :

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments