لاہور کے علاقہ شاد باغ میں سگے بیٹے نے ماں اور بہنوں کو قتل کر دیا

ماں اور بہنوں کو اُس وقت قتل کیا جب وہ والد کی قبر پر فاتحہ کے لیے آئیں

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین بدھ نومبر 15:43

لاہور کے علاقہ شاد باغ میں سگے بیٹے نے ماں اور بہنوں کو قتل کر دیا
لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 14 نومبر 2018ء) : لاہور کے علاقہ شاد باغ میں سگے بیٹے نے والدہ اور تین بہنوں پر فائرنگ کر دی۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت لاہور کے علاقہ شادباغ میں چن شاہ قبرستان میں سگے بیٹے نے والدہ اور تین بہنوں کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔ قبرستان سے ماں اور 2 بیٹیوں کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں جبکہ تیسری بیٹی کو زخمی حالت میں اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

ایس پی معاذ ظفر نے بتایا کہ پولیس کو قبرستان میں لاشوں کی موجودگی کی اطلاع صبح 6 بجے موصول ہوئی،پولیس نے موقع پر پہنچ کر دیکھا تو ایک سوتیلی بیٹی زخمی حالت میں تھی باقی سب کا انتقال ہو چکا تھا۔ معاذ ظفر نے کہا کہ ابتدائی تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی کہ یہ ان کا خاندانی تنازعہ تھا تاہم اس حوالے سے مزید تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

(جاری ہے)

اسپتال میں زیر علاج لڑکی نے پولیس کو دئے گئے بیان میں بتایا کہ اس کے والد ملک اصغر علی عرف بلو کو چند روز قبل شیخوپورہ میں مبینہ طور پر ان کی دوسری بیوی کے گھر میں فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا تھا۔

لڑکی کے مطابق اس کا بہنوئی انہیں والد کی قبر پر فاتحہ خوانی کرنے کے لیے لایا۔ جب وہ اپنی سوتیلی والدہ اور 2 بہنوں کے ہمراہ قبرستان پہنچی تو بہنوئی اور اس کے ساتھی گارڈ نے مبینہ طور پر فائرنگ کردی جس سے اس کی سوتیلی والدہ اور 2 بہنیں موقع پر ہلاک ہوگئیں تاہم وہ زخمی حالت میں جائے وقوعہ سے بھاگ گئی۔ پولیس کو مقامی افراد نے واقعہ کی اطلاع دی جس کے بعد لڑکی کو زخمی حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا جہاں اس کا علاج کیا جا رہا ہے۔

پولیس نے اس حوالے سے بتایا کہ تہرے قتل کے اس واقعے کی تفتیش جاری ہے جس میں مزید حقائق سامنے آنے کا امکان ہے۔ تاہم ابتدائی طور پر یہ غیرت کے نام پر قتل لگتا ہے۔ دوسری جانب وزیراعلٰی پنجاب سردار عثمان بزدار نے شاد باغ میں تہرے قتل کی اس لرزہ خیز واردات میں ماں اور 2 بیٹیوں کے قتل کے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments