بلوچستان حکومت کا سول سروسز کے نئے افسران کی ڈی ایم جی طرز پر تربیت کرانے کا فیصلہ

جمعرات اپریل 22:59

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اپریل2018ء) بلوچستان حکومت نے بلوچستان سول سروسز کے نئے آفیسران کی ڈی ایم جی طرز پر تربیت کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔ نئے آفیسران پہلی بار پاک فوج سے بھی پندرہ دنوں کی تربیت لیں گے۔ محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن کے ذرائع کے مطابق پبلک سروس کمیشن سے حال ہی میں اسسٹنٹ کمشنر کا امتحان پاس کرنے والے 6 خواتین سمیت 39 آفیسران پشاور کی سول سروسز اکیڈمی میں اس وقت زیر تربیت ہیں۔

محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی کی سفارش پر اکیڈمی میں کورس کا دورانیہ چار ماہ سے بڑھا کر چھ مہینے کردیا گیا ہے جبکہ کورس میں نئے موضوعات بھی شامل کئے گئے ہیں۔ حکومت بلوچستان کی جانب سے زیر تربیت اسسٹنٹ کمشنرز کی ڈی ایم جی طرز پر پاک فوج سے تربیت کرانے کی درخواست بھی جی ایچ کیو نے قبول کرلی ہے۔

(جاری ہے)

زیر تربیت چھ خواتین سمیت 39 اسسٹنٹ کمشنرز 30اپریل سے 14مئی تک پاک فوج کی سدرن کمانڈ کے زیر نگرانی پندرہ دنوں کی تربیت لیں گے۔

اس تربیت کے دوران اسسٹنٹ کمشنرز کیپٹن رینک کی وردی پہن کر صوبے کے مختلف علاقوں میں موجود آرمی یونٹس میں کام کرینگے۔ اس اقدام سے نئے آفیسران کو پاک فوج کی پیشہ ورانہ سرگرمیوں سے متعلق نہ صرف آگاہی حاصل ہوگی بلکہ مستقبل میں سول سروسز کے ان آفیسران اور پاک فوج کے درمیان رابطوں اور باہمی تعاون بھی فروغ پائے گا۔ علاوہ ازیں محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی نے نئے تحصیلداروں کی تربیتی مراحل اور کورس کو بھی بہتر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔