ملک میں منتخب نمائندوں کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے، نوازشریف

ملک میں چند لوگوں کی بہت خوشامد اور چاپلوسی کی جارہی ہے ، پرویز مشرف کے خوشامدی بھی موجود ہیں،اگر دل میں عوام کی قدر نہیں ہے تو کوئی منصب نہیں رکھنا چاہیے،ہمیں اپنے بہتر مستقل کو سنوارنے کے لئے خامیوں کو دور کرنا ہوگا،آئندہ انتخابات میں ووٹ کو عزت دلائیں گے، جو پارٹی کے ساتھ مخلص ہیں وہ آئندہ انتخابات کی تیاری کرلیں سابق وزیراعظم کا پارٹی اجلاس سے خطاب

ہفتہ اپریل 19:36

ملک میں منتخب نمائندوں کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے، نوازشریف
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ ملک میں چند لوگوں کی بہت خوشامد اور چاپلوسی کی جارہی ہے ، پرویز مشرف کے خوشامدی بھی موجود ہیں،اگر دل میں عوام کی قدر نہیں ہے تو کوئی منصب نہیں رکھنا چاہیے،ہمیں اپنے بہتر مستقل کو سنوارنے کے لئے خامیوں کو دور کرنا ہوگا،آئندہ انتخابات میں ووٹ کو عزت دلائیں گے، پاکستان میں عوامی نمائندوں کے ساتھ ناانصافی کی جا رہی ہے، جو پارٹی کے ساتھ مخلص ہیں وہ آئندہ انتخابات کی تیاری کرلیں۔

ہفتہ کو ماڈل ٹان لاہور میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت اجلاس ہوا۔ اجلاس میں رانا ثنا اللہ ، خواجہ آصف ، راجہ اشفاق سرور اور احسن اقبال سمیت دیگر نے شرکت کی۔

(جاری ہے)

اجلاس میں ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال، انتخابات 2018 کے حوالے سے لائحہ عمل وتیاریوں سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ انتخابات 2018 میں 3 ماہ رہ گئے ہیں اور ہمارے لئے اپنی مدد آپ کے تحت کام کرنے کا وقت آگیا ہے جو لوگ جماعت کے ساتھ مخلص ہیں وہ الیکشن کی تیاری کریں ہمیں آئندہ انتخابات میں ووٹ کو عزت دلوانی ہے اور ملک کے طول و ارض میں یہ پیغام پہنچانا ہے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں چند لوگوں کی چاپلوسی اور خوشامد کی جارہی ہے حتی کہ پرویز مشرف کے خوشامدی بھی موجود ہیں، کیا ہم کسی اصول پر کھڑے نہیں ہوں گے، ہمیں اپنے بہتر مستقل کو سنوارنے کے لئے خامیوں کو دور کرنا ہوگا، اپنی سوچوں، ذہنوں اور فکر کو تبدیل کرنا ہوگا۔ گزشتہ 30 سال سے ہم اس حوالے سے کوئی اہم پیشرفت نہیں لاسکے اور اب پاکستان آبادی کے لحاظ سے 5ویں یا چھٹے نمبر ہے جس میں منتخب نمائندوں کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے۔

نوازشریف نے کہا کہ شہبازشریف کا کردار قابل تعریف ہے، انہوں نے ملکی ترقی کیلئے عمدہ اور مثر کردار ادا کیا، وزیراعلی پنجاب نے صوبے میں سڑکوں کے جال بچھا دیئے اور صحت اور تعلیم پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے نئے اسپتال و کالجز بنائے اور ثابت کردیا کہ اگر دل میں عوام کی مخلوق کی قدر نہیں ہے تو کوئی منصب نہیں رکھنا چاہیے، لیکن دوسری جانب مخالفین پنجاب کی ترقی سے خوفزدہ ہوکر منفی پروپیگنڈا کررہے ہیں۔