کشمیر سپر لیگ ایسا خواب ہے جو پورا ہوگا‘صدر سردار مسعود خان

ٹورنامنٹ کا انعقاد نیک شگون ہے‘ مسئلہ کشمیر بھی اجاگر ہو گا‘کئی سلمان ارشاد سامنے آئینگے‘ مظلوم بھائیوں کے ساتھ ہیں‘ پری لانچنگ تقریب سے خطاب کرکٹ اب ریجنل ہو چکی ‘حکومت لیگ میں مکمل تعاون کریگی‘ چوہدری سعید‘کرکٹ ایک کھیل نہیں بلکہ یہ وے آف لائف اور عبادت ہے ‘ تقلین مشتاق کے ایس ایل کو پی ایس ایل لیول کا کرائینگے‘ بھارت کو چیلنج ایساایونٹ سرینگر کراکے دکھائے‘ چیئرمین مسعود خان‘سرینگر فائیٹر ز سیل نہیں ہوگ‘ مرتضیٰ درانی

جمعہ مئی 18:16

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) صدر آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر و پیٹرن ان چیف ’’کشمیر سپرلیگ‘‘ سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ آزادکشمیر کی سرزمین پر ’’کشمیر سپرلیگ‘‘ کا انعقاد اچھی شروعات اور نیک شگون ہے ۔اس سے ایک نہیں کئی ایک سلمان ارشاد نکل کر قومی کرکٹ ٹیم کا حصہ بنیں گے۔ کے ایس ایل ایک ایساخواب ہے جو انشاء اللہ پورا ہو گا اس کی تعبیر ہوگی۔

یہ بڑی شروعات ہے اچھا انجام ہوگا۔ اس کا اپنا برانڈ اور اپنی پہچان ہو نی چاہیے۔ ٹورنامنٹ کی تمام چھ ٹیموں کے اچھے نام ہیں ‘ سرینگر فائیٹرز ایسا نام ہے جس سے مسئلہ کشمیر اجاگر ہو گا۔ کشمیر ی بھائی ہمارے جسم وجان کا حصہ ہیں مقبوضہ کشمیر میں ظلم وبربریت کا بازار گرم ہے ۔ سرینگر میں کھیلوں کی اس طرح کی سرگرمیاں نہیں ہوسکتیں ۔

(جاری ہے)

ہم پر فرض ہے کہ جدوجہد آزادی کیلئے بھرپور کاوشیں کریں۔

یونیورسٹی اور کالج لیول پر بھی ایسے اقدامات کئے جائیں جس سے نوجوان کرکٹرز کیلئے بہترین ماحول پیدا ہو ۔ آزاد کشمیر میں بے پناہ ٹیلنٹ ہے ۔حکومت کشمیر سپر لیگ کے انعقاد میں مکمل تعاون کریگی۔ ان خیالات کاا ظہا رانہوں نے گزشتہ رو ز ’’کشمیر سپرلیگ‘‘ کی پری لانچنگ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب سے وزیرسپورٹس چوہدری سعید‘ پاکستانی سٹار کرکٹر ثقلین مشتاق ‘چیئرمین کے ایس ایل مسعود خان ‘چیئرمین کے ایس ایل سابق ایڈوائزر مرتضیٰ درانی نے بھی خطاب کیا۔

کے ایس ایل کے آفیشل لوگوکا افتتا ح بھی کیا گیا ۔ تقریب میں ڈپٹی کمشنر مظفرآباد مسعودالرحمان ‘ سابق ڈپٹی سپیکر شاہین کوثر ڈار‘ ایس سی او کمانڈر مقبول ‘ وائس چیئرمین کاشف جاوید‘ ڈائیریکٹر سپورٹس ملک شوکت حیات ‘ دلاور میر‘معززین شہر ‘ میڈیا نمائندگا ن نے شرکت کی۔ مہمان خصوصی سردار مسعود خان نے مزید کہاکہ آج کا دن آپ سب کیلئے مبارک ثابت ہو گا۔

کے ایس ایل بھارتی پروپیگنڈے کا بہترین توڑ ثابت ہوگا۔ وزریر سپورٹس چوہدری محمد سعید نے اپنے خطاب میں کہاکہ یہ کشمیر کا کرکٹ ہے حکومت بھرپور سپورٹ کرے گی۔ اس کی بھرپور تشہیر کی جائے۔ کرکٹ اب ریجنل ہو چکی ہے ۔ جب کشمیر کی ٹیم کھیلے گی تو ہم سب تالیاں بھی بجائیں گے اور بھرپور سپورٹ و حوصلہ افزائی بھی کرینگے۔ کشمیر سپر لیگ سے سیاحت کو بھی فرو غ ملے گا۔

مقبوضہ کشمیر میں اس طرح کی کرکٹ سرگرمیاں ناممکن ہیں۔ اگست ستمبر میں ہم پاکستان میں کلب لیول کھیلنے کیلئے اپنی ٹیم لے جائینگے۔ پاکستان کے سٹار کرکٹر لیجنڈتقلین مشتاق نے اپنے خطاب میں کہا کہ کشمیر ایک خوبصورت علاقہ ہے یہاں آکر معلوم ہو یہاں کے لوگ بھی خوبصورت ہیں۔ کشمیر سپرلیگ کا آغاز انتہائی اچھی کاوش ہے۔ کرکٹ ایک کھیل نہیں بلکہ یہ وے آف لائف اور عبادت ہے ۔

ہم نوجوانوں کو کرکٹ کے ذریعے نہ صرف صحت مند سرگرمیا ں دے سکتے ہیں بلکہ ان کو برائیوں سے بھی بچایا جا سکتا ہے۔ ایک صحت مند جسم کا مالک انسان مضبوط ایمان کا حامل ہوتا ہے۔ ’’کشمیر سپرلیگ‘‘ کے چیئرمین مسعود خان نے لیگ کے مقاصد سے آگاہ کیا اور کہاکہ کے ایس ایل کو پی ایس ایل لیول کا کرائینگے۔ آزادکشمیر کے شہری آزاد ہیں ۔ بھارت ہمیشہ پاکستان اور کشمیریوں کیخلاف پروپیگنڈہ کرتا ہے میں بھارت کو چیلنج کرتا ہوں کہ وہ سری نگر میں اس طرح کا ایک میچ کرا کے دکھا دے ۔

آج ثقلین مشتاق یہاں موجود ہیں ۔ ’’کشمیر سپرلیگ‘‘ میں کل چھ ٹیمیں کھیلیں گی۔ ہر ٹیم میں چار پاکستانی سٹار کھیلیں گے جس سے یہاں کے نوجوان کرکٹر ز کو بہت کچھ سیکھنے کو ملے گا۔ چیئرمین کے ایس ایل سابق ایڈوائزر مرتضیٰ درانی کا کہنا تھاکہ یہ لیگ صرف کھیل نہیں بلکہ ایک ویژن ہے جس کو آگے لے کر جائینگے۔ ہم مقبوضہ کشمیر کے بھائیوں کیساتھ ہیں۔ پانچ ٹیموں کی فروخت ہو گی لیکن سرینگر فائیٹرز کو فروخت نہیں کرینگے کیونکہ یہ کشمیریوں کے نام پر ہے کشمیریوں کا خون اتنا سستا نہیں جس کو خریدا جاسکے ۔ اس میگا ٹورنامنٹ میں عوام کو تفریح ملے گی ۔ اس پار مثبت پیغام جائے گا۔