ایم کیو ایم کے میئرز نے کراچی اور حیدرآباد کو کچرا کنڈی بنا دیا، شبانہ خان

پیپلز پارٹی پر الزام لگانے سے پہلے کراچی اور حیدرآباد میئرز کو اپنی کار کردگی دیکھ لیں، رہنما ویمنز ونگ پیپلز پارٹی حیدر آباد

جمعہ مئی 23:17

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) ایم کیو ایم کے میئرز نے کراچی اور حیدرآباد کو کچرا کنڈی بنا دیا ہے، پیپلز پارٹی پر الزام لگانے سے پہلے کراچی اور حیدرآباد میئرز کو اپنی کار کردگی دیکھ لیں، زکوات فطرہ اور بھتہ بند ہونے کی وجہ سے کراچی اور حیدرآباد کے ترقیاتی فنڈز کی رقم ایم کیو ایم کے منتشر دہڑوں کے جلسوں میں لگائی جا رہی ہے، ایم کیو ایم کے میئرز میں کام کی صلاحیت نہیں ہے تو مستعفی ہو جائیں، یہ بات پاکستان پیپلز پارٹی لیڈیز ونگ حیدرآباد کی رہنما شبانہ خان نے اپنے بیان میں کہی، انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی پہ یہ الزام غلط ہے کے پی پی پی نسلی بنیاد پر کراچی اور حیدرآباد کے میئرز کو فنڈ فراہم نہیں کر رہی، پیپلز پارٹی واحد جماعت ہے جس نے بنا کسی فرق کے سندھ کے تمام علائقوں میں یکسان ترقیاتی کام کر وائے ہیں، پی پی پی نے سب سے زیادہ سندھ کی شہری علائقوں میں ترقیاتی کام کر وائے ہیں کراچی اور حیدرآباد میئرز اپنی ناکامی اور نا سہلی کو چھپانے کیلئے پیپلز پارٹی حکومت پر من گھڑت الزام لگا رہے ہیں، انہوں نے کہا کے اگر پیپلز پارٹی کراچی اور حیدرآباد کی ضلعی حکومتوں کو فنڈ فراہم نہیں کرتی تو پھر میئرز اپنی عہدوں سے مستعفی کیوں نہیں ہوجاتے، انہون نے کہا کے ایم کیو ایم کے میئرز نے کراچی اور حیدرآباد کو موئن کا دڑو بنا دیا ہے، سندھ کے دو بڑے شہر گندی کا دھیر بن گئے ہیں میئرز کام کرنے کے بجائے رونے اور ماتم کرنے میں پورے ہیں کراچی اور حیدرآباد کی بلدیہ اعلی میں جھاڑو دینے والے سینکڑوں لوگ ایم کیو ایم کے حلف یافتہ کارکن بھرتی ہیں جو کام نہیں کر رہے، انہوں نے حکومت سندھ سے اپیل کی کے بلدیہ اعلی حیدرآباد اور کراچی میں کی گئی سینکڑوں بھرتیوں کا نوٹس لیا جائے اور دونوں شہروں کی صفائی کیلئے خود میدان میں آئے کیوں کے منتشر ایم کیو ایم کے نمائیندے اب عوامی کام کرنے کے اہل نہیں رہے ہیں#