حیدرآباد،درگاہ حضرت شاہ عبداللطیف بھٹائی رحمت اللہ علیہ کی سیکیورٹی کا جائزہ لینے کیلئے اعلی سطحی اجلاس

ہفتہ جون 20:37

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) درگاہ حضرت شاہ عبداللطیف بھٹائی رحمت اللہ علیہ کی سیکیورٹی کا جائزہ لینے کیلئے ضلعی انتظامیہ، پاک آرمی، پولیس،، محکمہ اوقاف اور انٹلیجنس عملداروں کا بھٹ شاہ ریسٹ ہائوس میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس۔ پاک فوج کے میجر بلاول نے ڈپٹی کمشنر مٹیاری قمر رضا بلوچ اور پولیس کے عملداروں کے ساتھ درگاہ پر حاضری، سیکیورٹی کے حوالے سے تفصیلی جائزہ لیا گیا، سیکیورٹی کے معاملات کومشترکہ طور پر موثر بنانے کیلئے رینجرز کی دو موبائل گاڑیاں درگاہ پر مستقل طور پر مقرر کرنے کا فیصلا۔

درگاہ حضرت شاہ عبداللطیف بھٹائی کو سیکیورٹی خدشات کو نظر میں رکھتے ہوئے ہفتے کے دن بھٹ شاہ ریسٹ ہائوس میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوا جس میں پاک آرمی کے میجر بلاول، ایس ایس پی مٹیاری سید امداد علی شاہ، ڈی سی مٹیاری قمر رضا ْبلوچ، ڈی ایس پی اختر پرویز اور دیگر سیکیورٹی حکام نے شرکت کی۔

(جاری ہے)

اجلاس میں ضلعی انتظامیہ، پولیس اور محکمہ اوقاف کے افسران نے تاحال سیکیورٹی کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی۔

ایس ایس پی مٹیاری سید امداد علی شاہ نے بتایا کہ درگاہ حضرت شاہ عبداللطیف بھٹائی کو شدید سیکیورٹی خدشات لاحق ہیں جس کے لئے پولیس کی طرف سے موثر انتظامات کئے گئے ہیں تاہم سیکیورٹی کے حوالے سے بعض امور کا تعلق محکمہ اوقاف سے ہے جن میں درگاہ پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے، درگاہ پر تعینات لیڈیز پولیس سرچرز کے لئے علیحدہ کمرہ بنانے سمیت دیگر امور شامل ہیں جن سے متعلق محکمہ اوقاف کے افسران نے کہا ہے کہ ان امور پر پیش رفت جاری ہے۔

ایس ایس پی مٹیاری کا مزید کہنا تھا کہ سیکیورٹی خدشات کو نظر میں رکھتے ہوئے درگاہ پر رینجرز کی دو موبائل مستقل طور پر تعینات کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے، اس کے علاوہ ضلعی پولیس نے تیرہ واکی ٹاکی سیٹ فراہم کرنے کے علاوہ مجموعی طور پر کمیونیکیشن نظام کو بہتر کرنے کیلئے بھرپور اقدامات اٹھائے ہیں۔ ایس ایس پی سید امدا دعلی شاہ نے کہا کہ درگاہ کی سیکیورٹی پولیس،، ضلعی انتظامیہ، محکمہ اوقاف کی مشترکہ ذمہ داری ہے اس لئے تمام متعلقہ اداروں کے تعاون سے درگاہ کی سیکیورٹی کو فول پروف بنایا جائے گا۔