فیڈریشن الیکشن میں اپوزیشن گروپ کو ایک بارپھرچھٹی کا دودھ یاد دلادیں گے،ایس ایم منیر

ہم ڈیموکریسی کی پیداوار ہیں،ڈرائنگ روم کی سیاست پر یقین نہیں رکھتے، افتخار علی ملک ، نوید جان بلوچ کی یو بی جی میں شمولیت خوش آئند ہے،زبیرطفیل یو بی جی کے عشائیہ میں سینیٹر الیاس بلور،میاں ادریس،خالدتواب،طارق حلیم،گلزارفیروز،نعمان بٹ،حنیف گوہر،رحیم جانو،ریاض شیخ،سہیل الطاف اور دیگر کا خطاب

جمعہ ستمبر 16:37

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 ستمبر2019ء) یونائٹیڈ بزنس گروپ کے سرپرست اعلیٰ ایس ایم منیر نے کہا کہ ہم ملک بھر کی بزنس کمیونٹی کو متحد کررہے ہیں تاکہ موجودہ گھمبیرمعاشی حالات میں انکے مسائل کم سے کم ہوسکیں لیکن فیڈریشن میں اپوزیشن گروپ بزنس مین پینل ملک بھر کی کاروباری برادری کیلئے رکاوٹیں پیدا کررہا ہے،ہم لڑائی جھگڑوں پر یقین نہیں رکھتے ،اس سال بھی ہم ایف پی سی سی آئی کے الیکشن کیلئے مکمل تیار ہیں اگر اپوزیشن کو شوق ہے تو وہ ہمارے گروپ کا مقابلہ کرلے اسے مسلسل چھٹی شکست ہوگی اور ہمارے امیدوارفیڈریشن الیکشن میںاپوزیشن گروپ کو ایک بارپھرچھٹی کا دودھ یاد دلادیں گے۔

انہوں نے ان خیالات کا اظہارگزشتہ شب یو بی جی کے سیکریٹری جنرل زبیرطفیل اور اپنی جانب سے پاکستان بھر سے آئے ہوئے یو بی جی لیڈران کے اعزاز میں دیئے گئے عشائیہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پرسارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر اوریونائٹیڈ بزنس گروپ کے چیئرمین افتخار علی ملک،زبیرطفیل،سینیٹر الیاس بلور،میاں محمد ادریس، ریاض الدین شیخ،صدارتی امیدوار ڈاکٹر نعمان ادریس بٹ،سینئرنائب صدر کے امیدوار حنیف گوہر،سہیل الطاف،خالدتواب،طارق حلیم،گلزارفیروز،عبدالرحیم جانو،تنویراحمدشیخ، عبدالرئوف مختار، نوید جان بلوچ اور دیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ معروف سینئررہنما بشیرجان محمد،سردار یاسین ملک،عارف حبیب،سینیٹر عبدالحسیب خان،عقیل کریم ڈھیڈھی،مظہرعلی ناصر،حمیداختر چڈھا،ملک سہیل،نوراحمدخان،شکیل ڈھینگڑا،محمدسلیم بکیا،شاہین الیس سروانہ،ملک خدابخش،رضوانہ شاہد،نورافشاں،الماس حمیرانی،منیرسلطان،سمیع خان،سلمان طفیل،فرحان حنیف،ممتاز شیخ،عتیق میر،رفیق سلیمان،حاجی افضل،شرف الدین میمن،جوہرقندھاری،مسعودنقی،اکرام راجپوت،فرخ مظہر،راشداحمدصدیقی،سینیٹر اکرم ولی محمد سمیت بہت بڑی تعداد میں تاجراورصنعتکار موجود تھے۔

ایس ایم منیر نے کہا کہ فیڈریشن الیکشن میں اپوزیشن کواس با ر ایسی عبرتناک شکست ہوگی کہ آئندہ کئی سال تک ہمارے گروپ کے مقابلے میں آنے کی ہمت نہیں ہوگی،میں نے اپنے چیئرمین افتخار علی ملک اور دیگر ساتھیوں کے ساتھ ملکر ملک وقوم کی خدمت کرنے،نوجوانوں کو آگے لانے اور فیڈریشن چیمبر سے بدعنوانیوں کے خاتمے کیلئے جو سفر شروع کیا تھااس میں ملک بھر کے تاجرنمائندے جوق درجوق شامل ہوئے اورآج یو بی جی ایک مضبوط جماعت بن چکی ہے، ہمیں کسی عہدے یا کسی صلہ کی لالچ نہیں بلکہ ہم یہ چاہتے ہیں کہ پاکستان ترقی کرے اور معیشت مستحکم ہو،موجودہ حکومت کے ہاتھ مضبوط کررہے ہیں لیکن وزیراعظم عمران خان بھی معاشی پالیسیوں میں فیڈریشن کے ساتھ مشاورت کو ترجیح دیں۔

سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدراوریونائٹیڈ بزنس گروپ کے چیئرمین افتخار علی ملک نے کہا ہے کہ ہم نے اپنی پوری زندگی جمہوریت کی بقاء کیلئے گزار دی ہے اور میںنے 39الیکشن لڑ کر بزنس کمیونٹی کی خدمت کی ہے،ہم ڈیموکریسی کی پیداوار ہیں،ہم ڈرائنگ روم کی سیاست پر یقین نہیں رکھتے بلکہ تمام تر فیصلے اپنے تمام ساتھیوں کے درمیان بیٹھ کر کرتے ہیں یہی وجہ ہے کہ پاکستان کا ہر چھوٹا اور بڑا تاجرہم پر اعتمادکرتا ہے اور کراچی سمیت پورا پاکستان یونائٹیڈ بزنس گروپ کے ساتھ ہے۔

افتخار علی ملک نے کہاکہ کام کرنا مشکل اور دوسرے پر الزام لگانا سب سے آسان ہے اور الزامات وہ لوگ لگاتے ہیں جو کام نہیں کرسکتے،یو بی جی نے فیڈریشن میں5سال کے دوران جو کام کئے وہ تاریخی ہیں جبکہ اپوزیشن گروپ اپنے دور اقتدار میں فیڈریشن کے خزانے پر ہاتھ صاف کرتا رہا،ہم نے ایف پی سی سی آئی کی اسلام آباد کی بلڈنگ مکمل کی ،گوادر میں فیڈریشن کا آفس قائم کیا،پشاور کی بلڈنگ کی تعمیر کیلئے منظوری دی گئی ، فیڈریشن ہائوس کراچی میں بھی ترقیاتی کام کرائے۔

انہوں نے کہا کہ یونائٹیڈ بزنس گروپ کی بہترین کارکردگی کی بدولت ملک بھر کی 95فیصد بزنس کمیونٹی ہمارے گروپ کے ساتھ ہے اور اسی طاقت کے بل بوتے پر ہم 28دسمبر2019کو ہونے والا فیڈریشن الیکشن بھی جیتیں گے۔سینیٹر الیاس بلور نے کہا کہ جن لوگوں کی نیت اچھی ہوتی ہے وہی کامیاب ہوتے ہیں، ہم تو الیکشن لڑتے ہوئے پیدا ہوئے اور الیکشن لڑتے ہوئے ہی دنیا سے چلے جائیں گے۔

یو بی جی کے سیکریٹری جنرل زبیرطفیل نے کہا کہ بلوچستان سے نوید جان بلوچ جیسے نوجوان رہنما کی یو بی جی میں شمولیت خوش آئند ہے اور ہم انہیں خوش آمدید کہتے ہیں جبکہ آئندہ چندروز میں اپوزیشن گروپ کے کئی اہم رہنما ہمارے ساتھ یو بی جی کے قافلے میں شامل ہوجائیں گے، ہم مخالفین کی طرح فٹافٹ اور شارٹ کٹ کو نہیں مانتے بلکہ نئی نسل کو ایک مضبوط پلیٹ فارم دے رہے ہیں تاکہ اس ادارے میں جمہوریت کا علم بلند رہے اور ہمیں یقین ہے کہ ہمارے تمام امیدواربھاری اکثریت سے منتخب ہوکراس ادارے کی نیک نامی میں مزید اضافہ کریں گے۔

یو بی جی کے مرکزی ترجمان گلزار فیروز کے مطابق ہمارے گروپ کے پاس بہترین امیدواروں کی قطار ہے جبکہ اپوزیشن امیدواروں کی تلاش میں دھکے کھا رہی ہے مگر کوئی ان پر اعتبار کرنے کو تیار نہیں، مخالفین 28دسمبر کو ہمارے مقابل آنے کی ہمت ہی نہیں کریں گے اور اگر آئے بھی تواپنا بوریا بستر سمیٹ کر گھروں میں چلے جائیں گے۔