وفاقی اور سندھ حکومتوں کے مابین جاری سرد جنگ میں شدت

کلیم امام کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کے جواب میں چیف سیکرٹری ممتاز علی شاہ کی تبدیلی پہ غور

Mian Nadeem میاں محمد ندیم بدھ جنوری 19:56

وفاقی اور سندھ حکومتوں کے مابین جاری سرد جنگ میں شدت
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔15 جنوری۔2020ء) وفاقی اور سندھ حکومتوں کے مابین جاری سرد جنگ میں مزید شدت آگئی ہے صوبائی کابینہ نے جب آئی جی سندھ ڈاکٹر سید کلیم امام کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا تو وفاق نے صوبائی چیف سیکرٹری ممتاز علی شاہ کی تبدیلی پہ غور شروع کردیا ہے. نجی ٹی وی نے اپنے ذرائع کے حوالے سے دعوی کیا ہے کہ وفاق نے چیف سیکرٹری سندھ ممتاز علی شاہ کو تبدیل کرنے پرغورشروع کردیا ہے سیاسی مبصرین کے مطابق وفاقی حکومت کا یہ اقدام جواب آں غزل بھی ہوسکتا ہے.

(جاری ہے)

سیاسی مبصرین کی بات اس لحاظ سے کچھ زیادہ غلط دکھائی نہیں دیتی ہے کہ کچھ دیر قبل ہی سندھ کابینہ نے آئی جی سندھ ڈاکٹر سید کلیم امام کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی منظوری دی ہے اس بات کا اعلان صوبائی وزیراطلاعات و نشریات سعید غنی نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں ںے اپنی پریس کانفرنس میں آئی جی سندھ پر متعدد الزامات بھی عائد کیے ہیں.نجی ٹی وی کو اس ضمن میں ذمہ دار ذرائع نے بتایا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے راہنماﺅں نے صوبائی کابینہ کے فیصلے پر سخت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ کسی بھی قیمت پر آئی جی سندھ کو تبدیل نہیں ہونے دیں گے جب کہ بعض راہنماﺅں نے موقف اپنایا ہے کہ بلدیاتی انتخابات کے قریب آئی جی کی تبدیلی بہت کچھ کہہ رہی ہے.ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ پی ٹی آئی کے چند راہنماﺅں نے آئی جی سندھ کی تبدیلی کے فیصلے کو عدالت میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس مقصد کے لیے انہوں نے فیصل صدیقی ایڈووکیٹ سے بھی رابطہ قائم کرلیا ہے.وفاق نے چیف سیکرٹری سندھ ممتاز علی شاہ کو تبدیل کرنے پرغورشروع کردیا ہے سیاسی مبصرین کے مطابق وفاقی حکومت کا یہ اقدام جواب آں غزل بھی ہوسکتا ہے. سیاسی مبصرین کی بات اس لحاظ سے کچھ زیادہ غلط دکھائی نہیں دیتی ہے کہ کچھ دیر قبل ہی سندھ کابینہ نے آئی جی سندھ ڈاکٹر سید کلیم امام کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی منظوری دی ہے