سندھ میں وڈیرے کا معمر خاتون پر بہیمانہ تشدد، منہ کالا کر کے بال مونڈ دیے

سندھ کے علاقے قمبر شہداد کوٹ میں وڈیرے کے بیٹے نے کبوتر پکڑنے کے الزام میں معمر خاتون پر تشدد کر ڈالا، خاتون کے بال کاٹ کر منہ کالا کر دیا، جھگی کو بھی آگ لگا دی

Kamran Haider Ashar کامران حیدر اشعر جمعرات مارچ 06:23

سندھ میں وڈیرے کا معمر خاتون پر بہیمانہ تشدد، منہ کالا کر کے بال مونڈ ..
کراچی (اردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 26 مارچ 2020ء) سندھ میں وڈیرے کا معمر خاتون پر بہیمانہ تشدد، منہ کالا کر کے بال مونڈ دیے، سندھ کے علاقے قمبر شہداد کوٹ میں وڈیرے کے بیٹے نے کبوتر پکڑنے کے الزام میں معمر خاتون پر تشدد کر ڈالا، خاتون کے بال کاٹ کر منہ کالا کر دیا، جھگی کو بھی آگ لگا دی۔ تفصیلات کے مطابق سندھ میں طاقت کے نشے میں چور وڈیرے کے بیٹے نے انسانیت کا سر شرم سے جھکا دیا۔

سندھ کے علاقے قمبر شہداد کوٹ کے گاؤں کھوڑی بازار میں انسانیت سوز واقعہ پیش آیا جس میں وڈیرے کے بیٹے نے ظلم کی انتہا کر دی۔ بدبخت لڑکے کے کبوتر پکڑنے کا الزام لگاتے ہوئے اپنے 6 ساتھیوں سمیت معمر خاتون کو بدسلوکی کا نشانہ بناتے ہوئے اس پر تشدد کر ڈالا۔ 
بتایا جا رہا ہے کہ عمرہ رسیدہ خاتون کے سر کے بال مونڈ دیے گئے اور اس کے منہ پر کالک بھی مل دی گی، مبینہ بدسلوکی سے بھی جی نہ بھرا تو غریب خاتون کی جھگی کو آگ لگا ڈالی۔

(جاری ہے)

متفرق میڈیا رپورٹس کے مطابق بدسلوکی اور تشدد کا نشانہ بننے والی عمرہ رسیدہ خاتون کی شناخت کاملہ تونیو کے نام سے ہوئی ہے جس نے اپنے ساتھ ہوئے شرف انسانیت سے گرے سلوک کی دردناک روداد سناتے ہوئے بتایا کہ میرے بیٹے نے وڈیرے کے بیٹے کا کبوتر پکڑ لیا جس کے بعد وڈیرے کے بیٹے اور اس کے 6 ساتھیوں نے ان کے گھر پر دھاوا بول دیا۔ خاتون نے بتایا کہ ان لڑکوں نے گھر میں گھسنے کے بعد ہمیں بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانا شروع کر دیا۔

خاتون نے یہ بھی بتایا کہ ان کو تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد ان کے گھر کو آگ لگا دی گئی جو کہ مکمل طور پر جل کر خاکستر ہو گیا ہے۔ 
میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ انسانیت سوز واقعہ تھانہ ڈرگھ کی حدود میں پیش آیا ہے، جہاں پر واقعہ کا علم ہونے کے بعد پولیس نے مبینہ بدسلوکی کا نشانہ بننے والی معمر خاتون کی مدعیت میں 7 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔

مقدمے میں با اثر وڈیرے کو بھی نامزد کر لیا گیا ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق نامزد ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں جس میں ابھی تک ایک نامزد ملزم جس کا نام فضل محمد تونیو ہے کو گرفتار کیا جا چکا ہے جبکہ باقی کے 6 ملزم فرار اختیار کرنے میں کامیاب ہو گئے جن کی گرفتاریوں کے لیے پولیس متحرک ہے۔

متعلقہ عنوان :