Live Updates

تین ہفتے سے سعودی حکومت سے رابطے میں ہوں، نورالحق قادری

سعودی عرب حج سے متعلق فیصلے پراسلامی ممالک کواعتماد میں لے گا، سعودی حکام نے کہا کہ فی الحال حاجیوں کی سہولت کیلئے ہوٹلز، رہائش، ٹرانسپورٹ کا کسی سے حتمی معاہدہ نہ کرنا۔وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری کی پریس کانفرنس

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ جمعرات مارچ 19:23

تین ہفتے سے سعودی حکومت سے رابطے میں ہوں، نورالحق قادری
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 مارچ 2020ء) وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری نے کہا ہے کہ تین ہفتے سے سعودی عرب سے رابطے ہوں، سعودی عرب حج سے متعلق فیصلے پراسلامی ممالک کواعتماد میں لے گا، سعودی حکام نے کہا کہ فی الحال حاجیوں کی سہولت کیلئے ہوٹلز، رہائش، ٹرانسپورٹ کا کسی سے حتمی معاہدہ نہ کرنا۔ انہوں نے وفاقی وزراء کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر تین ہفتے سے سعودی وزارت حج سے رابطے میں ہوں، ہمیں سعودی وزارت نے کہا کہ ابھی کسی کے ساتھ بھی حج کے حتمی معاہدے نہ کرنا، جیسا کہ حاجیوں کی سہولت کیلئے سعودی عرب میں ٹرانسپورٹ، کیٹرنگ ، رہائشیں اور دوسرے انتظامات کرتے ہیں، یہ سارے معاہدے ابھی نہ کریں۔

سعودی وزارت حج نے کہا کہ حج سے متعلق فیصلہ تمام اسلامی ممالک کو اعتماد میں لے کر کریں گے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ مسلم امہ نے احتیاطی تدابیر کے طور پر اقدامات اٹھائے ہیں۔ تین روز سے مکہ مکرمہ اور مسجد اقصیٰ کو بند کردیا گیا ہے، ترکی، مصر، مراکش اور متعدد ممالک کی مساجد میں اجتماعات پر پابندی عائد ہے۔ لیکن مساجد کو بند نہیں ہونے دیا جائے گا۔

مساجد میں 5 وقت کی نماز اور جمعہ کی نماز مختصر کی جارہی ہے، 50 سے کم عمر اور جوان لوگوں کی بہت مخصوص تعداد جائے گی۔
اس موقع پر ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ ڈاکٹر فیصل سلطان کو ہم نے وبائی امراض کے ماہر کوٹیم میں شامل کیا ہے، ہم قومی سطح پر ڈاکٹرز اور نرسز کی تربیت کا پروگرام بھی لانچ کررہے ہیں،5 ہزار طبی عملے کی ٹریننگ ایک یا ڈیڑھ ماہ تک شروع کریں گے۔

عالمی سطح پر کورونامریضوں کی تعدادپونے پانچ لاکھ مریض ہیں۔ ایک لاکھ پندرہ ہزار مریض صحت یاب ہوگئے ہیں۔ پاکستان میں اس وقت 1102مریض تصدیق شدہ ہیں۔ 24 گھنٹوں میں 102مریضوں کا اضافہ ہوا۔بلوچستان31، پنجاب223، سندھ417، آزاد کشمیرمیں ایک کیسز ہیں۔ ابھی تک 21 مریض صحت یاب ہوچکے ہیں۔افسوس کے ساتھ 8اموات ہوئی ہیں۔ پاکستان نے اس وقت مختلف ہسپتالوں میں575 مریض داخل ہیں۔

زائرین ایران سے آئے تھے، ان کو مختلف صوبوں میں قرنطینہ میں رکھے گئے۔ انہوں نے کہا کہ 5 اپریل تک ڈاکٹرز، نرسز اور طبی عملے کے پاس حفاظتی سامان کی وافر مقدار موجود ہوگی۔اس موقع پرمیڈیا بریفنگ میں وفاقی وزیر اسد عمر نے بتایا کہ 13مارچ کو قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی بنائی گئی۔آج قومی سلامتی کمیٹی کی پانچویں میٹنگ تھی۔

کورونا سے نمٹنے کیلئے حکمت عملی کے تحت آگے چل رہے ہیں۔صحت سے متعلقہ عملہ ہمارے مجاہدیں ہیں۔وائرس دنیا کے 182سے زائد ممالک میں پھیل چکا ہے، کورونا کا پھیلاؤ روکنے کیلئے لوگوں کو گھروں میں رہنا ہوگا۔ہم نے کورونا سے بچنے کیلئے باقی سارے کام روک دیے ہیں۔ دنیا پر کورونا سے منفی معاشی اثرات مرتب ہوئے۔شفقت محمود نے بتایا کہ تمام صوبوں کے ساتھ رابطے کیے گئے اور معاہدہ کیا گیا ہے کہ ملک بھر میں 31 مئی تک تمام تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔

رمضان شریف میں بھی تعلیمی ادارے بند رکھے جائیں گے۔اسد عمر نے کہا کہ چند علاقوں سے گندم اور آٹے کی قیمتوں میں اضافے کی شکایات آئی ہیں، لیکن ملک میں کہیں بھی گندم کی قلت نہیں ہے، نہ ہی آٹے کی قلت نظر آرہی ہے، گندم وافر مقدار میں موجود ہے۔ہم موجودہ حالات میں کسی کو ذخیرہ اندوزی نہیں کرنے دیں گے۔اگر کچھ لوگ اب بھی ذخیرہ اندوزی کررہے ہیں تو وہ ملک اور اللہ کے مجرم ہیں۔
کرونا وائرس کی تباہ کاریاں سے متعلق تازہ ترین معلومات