اسلام اورآئین پاکستان میں بھی تما م اقلیتوں کو اکثریت کے برابر حقوق دیئے گئے ہیں،محمد اعجاز نوری

ہم میں اکثریت اور اقلیت کا کو ئی تصور نہیں ہونا چا یئے کیونکہ ہم سب پاکستانی ہیں،چیرمین پاکستان کونسل فار سوشل ویلفیئر اینڈ ہیو من رائٹس

پیر ستمبر 21:00

سیالکوٹ/ لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 14 ستمبر2020ء) سکھوں کے روحانی پیشوا بابا گورنانک نے امن ، واحدنیت، رواداری ، انسانی خدمت اور سماجی بھا ئی چارے کا درس دیا جو کہ مسلمانوں اور سکھ قوم کو قریب لانے اور دنیا میں امن کے فروغ کے لیے معاون ثابت ہو سکتا ہے اسلام اورآئین پاکستان میں بھی تما م اقلیتوں کو اکثریت کے برابر حقوق دیئے گئے ہیں ہم میں اکثریت اور اقلیت کا کو ئی تصور نہیں ہونا چا یئے کیونکہ ہم سب پاکستانی ہیںاِن خیالات کا اظہارپاکستان کونسل فار سوشل ویلفیئر اینڈ ہیو من رائٹس کے چیئر مین محمد اعجاز نوری نے سکھوں کے روحانی پیشوا بابا گورنانک سے منسوب تاریخی گورداوارہ بابے دی بیری میں گجر ات کے معروف روحانی پیشوا سید منیر احمد چشتی ؒ کی اُولاد کی جانب سے سکھوں کی مقدس مذہبی کتاب گرورگرنتھ صاحب کے 100 سالہ نادر نسخے کو گوروداوارہ بابے دی بیر کے حوالے کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہو ئے کیا قیام پاکستان کے بعد گجرات کے اس مسلمان خاندان نی73 سال تک اس مقدس کتاب کی حفاظت کی امریکہ میں مقیم معروف پاکستانی مذھبی رہنما اور اٹلانٹا میں اسلامی مرکز کے خطیب علامہ حافظ محمد ارشد جاوید، معروف پنجابی مصنف اور دانشور افتخار احمد کالروی، معروف قانون دان محمد فاروق بلوچ ایڈووکیٹ، شبر ہاشمی، سردار جسکرن سنگھ سدھو، ہیرا سنگھ، سمیت سینکڑوں مسلمان اور سکھوں نے شرکت کی پاکستان کونسل فار سوشل ویلفیئر اینڈ ہیو من رائٹس کے چیئر مین محمد اعجاز نوری اس موقعہ پر مہمان خصوصی تھے تقریب سے خطاب کرتے ہو ئے محمد اعجاز نوری نے مزید کہاکہ اسلامی نظام حکومت اور آئین پاکستان میں مذہبی اقلیتوں کے مال وجان اور مذہبی و انسانی حقوق کی ضمانت دی گئی ہے لہٰذا پاکستان میںبسنے والی مذھبی اقلیتوں اور پسماندہ طبقات میں احسا س محرومی ختم کرنے کے لیے آئین میں ترامیم سمیت ہر ممکن عملی اقدامات وقت کی اہم ضرورت ہیں تا کہ پاکستان کو مذھبی آزادی ، انسانی حقوق ، مساوات اور دیر پاء امن و ترقی سے مزین ایک مثالی ریاست بنایا جا سکے جس کا خواب قیام پاکستان کے وقت قائد اعظم اور تحریک پاکستان کے اکابرین نے دیکھا تھا اُنہوں نے کہا کہ تما م تر محب وطن اور مہذب پاکستانی پاکستان میں بسنے والی اقلیتوں خصوصاًً سکھ قوم کے بنیادی ، مذھبی ، سماجی اور آئینی حقوق کے تحفظ کے لیے پاکستانی سکھ کمیونٹی کے ساتھ کھڑی ہے اس موقعہ پر خطا ب کرتے ہو ئے امریکہ میں مقیم معروف پاکستانی مذھبی رہنما اور اٹلانٹا میں اسلامی مرکز کے خطیب علامہ حافظ محمد ارشد جاوید نے کہا کہ پاکستان سے ہجرت کر کے بھارت جانے والے سندھ کے ہنددوں کی واپسی اس بات کا ثبوت ہے کہ بھارت کسی بھی صورت میں اقلتیوں اور کمزور طبقوں کے محفوظ ملک نہیں ہے جبکہ اس کے مقابلے میں پاکستان ہندوں، سکھوں سمیت تمام اقلیتوں کے لیے محفوظ ملک ہے تاریخی گوروداورہ کے گرنتھی اور سردار جسکرن سنگھ سدھو نے اس موقعہ پر خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ دفاع پاکستان اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں تمام پاکستانی بلا امتیاز مذہب متحد ہیں اور افواج پاکستان کی پشت پر کھڑے ہیں اورایک قوم کی صور ت میں ملک کے استحکام اور دفاع کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے تقریب میں گرنتھ صاحب کو گورداواروہ میں لایا گیا اور خصوصی عبادت کے دوران ملک کی خوشحالی، ترقی اورپائیدار امن کے لیے دُعا کی گئی۔