عوام کے محافظ بھی عزتیں لوٹنے لگے

جہانیاں میں پولیس اہلکار نے 12 سالہ بچے کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

muhammad ali محمد علی ہفتہ ستمبر 01:02

عوام کے محافظ بھی عزتیں لوٹنے لگے
جہانیاں (اردو پوائنٹ- اخبارتازہ ترین 18ستمبر2020ء) عوام کے محافظ بھی عزتیں لوٹنے لگے، جہانیاں میں پولیس اہلکار نے 12 سالہ بچے کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ تفصیلات کے مطابق سانحہ گجر پورہ کے بعد سے پنجاب پولیس اپنی نااہلی کی وجہ سے مسلسل تنقید کی زد میں ہے۔ عوام اپنے محافظوں سے کارکردگی بہتر کرنے کا مطالبہ کر رہی ہے۔ تاہم ایسے وقت میں ایک پولیس اہلکار، جو عوام کا محافظ ہے، اسی نے ایک بچے کی عزت لوٹ لی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب کے شہر جہانیاں میں ایک پولیس اہلکار نے 12 سالہ معصوم بچے کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس کے مطابق عابد نامی پولیس اہلکار محکمہ جیل میں ملازم ہے۔ بچے کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے واقعے کی شکایت موصول ہونے کے بعد اہلکار کی گرفتاری کیلئے چھاپہ مارا گیا تاہم وہ فرار ہوگیا۔

(جاری ہے)

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کو گرفتار کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں، وہ جلد قانون کی گرفت میں ہوگا۔

واضح رہے کہ سانحہ گجر پورہ کے بعد سے ملک میں خواتین اور بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنائے جانے کے کیسز رپورٹ ہونے کی شرح میں تشویش ناک حد تک اضافہ ہوا ہے۔ اس تمام صورتحال میں عوام اور عوامی نمائندوں کی جانب سے جنسی زیادتی کے ملزمان کو سخت اور عبرت نام سزائیں دینے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ اس حوالے سے وزیراعظم اور چند وفاقی وزراء نے اعلان کیا ہے کہ جنسی زیادتی کے ملزمان کو نامرد کرنے اور سرعام پھانسی کی سزا دینے کا بل جلد پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا۔