وفاق المدارس کے طلبا کی مولانا فضل الرحمان سے عقیدت اور بیعت ہے

بیعت اتنی آسانی سے نہیں ٹوٹتی، مدارس کے طلباء کو مولانا سے الگ نہیں کر سکتے، تحریک انصاف کے رکن پارلیمنٹ عامر لیاقت حسین نے اپنی حکومت کو خبردار کر دیا

muhammad ali محمد علی جمعرات جنوری 00:12

وفاق المدارس کے طلبا کی مولانا فضل الرحمان سے عقیدت اور بیعت ہے
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جنوری2021ء) عامر لیاقت حسین کا کہنا ہے کہ مدارس کے طلباء کو مولانا سے الگ نہیں کر سکتے۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے رکن پارلیمنٹ عامر لیاقت حسین نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مدارس کے طلباء کو جے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے الگ نہیں کیا جا سکتا۔ رہنما تحریک انصاف کے مطابق اس کی ایک وجہ ہے اور وہ یہ کہ وفاق المدارس کے طلبا کی مولانا فضل الرحمان سے عقیدت اور بیعت ہے۔

مدارس کے طلباء مولانا فضل الرحمان کو اپنا استاد مانتے ہیں، ان کی بیعت کر رکھی ہے، اور بیعت اتنی آسانی سے نہیں ٹوٹتی۔ جہاں بیعت آ جاتی ہے وہاں آپ کسی کو کسی سے الگ نہیں کر سکتے۔ اس لیے یہاں کوئی اور طریقہ کار اختیار کیا جا سکتا ہے۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ بدھ کے روز وزیراعظم عمران خان نے وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کو پی ڈی ایم کے جلسوں میں مدارس کے طلبہ کی شرکت کو روکنے کا ٹاسک سونپ دیا۔

وزیراعظم کی طرف سے ہدایت ملنے کے بعد وفاقی وزیر داخلہ نے اہم اجلاس طلب کر لیے ہیں ، اس سلسلے میں شیخ رشید احمد کی سربراہی میں علمائے کرام کا اہم اجلاس جمعرات کو ہوگا۔ بتایا گیا ہے کہ وزیر اعظم کی جانب سے امن و امان کے قیام کے لیے وزیر داخلہ شیخ رشید کی قیادت میں بنائی گئی کمیٹی اہم فیصلے کرے گی جب کہ علمائے کرام کے ساتھ باہمی مشاورت کے اجلاس میں پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کی احتجاجی تحریک کے دوران امن وامان کے قیام پر مشترکہ لائحہ عمل طے کیا جائے گا ، مذکور اجلاس میں حکومتی ترجیحات کے حوالے سے بھی علمائے کرام کو اعتماد میں لیا جائے گا۔

یہاں واضح رہے کہ اس سے پہلے وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ کسی کو امن و امان خراب کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ، تمام قانون نافذ کرنے والے ادارے باہمی روابط کو بڑھائیں ، امن و امان کے حوالے سے کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور کسی کو بھی ملک کا امن و امان خراب کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔