پولیس اہلکاروں نے ناکے پر نہ رُکنے والی گاڑی پر فائرنگ کر دی، کارسوار جاں بحق

فیصل آباد میں پولیس فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے نوجوان کے اہل خانہ کا احتجاج، سڑک بلاک کردی، آئی جی پنجاب نے واقعے کا نوٹس لے لیا

Shehryar Abbasi شہریار عباسی جمعرات جنوری 00:40

پولیس اہلکاروں نے ناکے پر نہ رُکنے والی گاڑی پر فائرنگ کر دی، کارسوار ..
فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین ۔ 20 جنوری 2021ء) ناکے پر نہ رکنا شہریوں کو مہنگا پڑ گیا۔ پٹرولنگ پولیس نے فائرنگ کردی، ایک شخص جاں بحق ، 3 زخمی ہو گئے ۔ تفصیلات کے مطابق فیصل آباد کے علاقے ڈجکوٹ میں پویس نے ناکے پر نہ رکنے پر گاڑی پر فائرنگ کردی۔فائرنگ کے نتیجے میں وقاص نامی شخص جاں بحق ہوگیا جبکہ اس کے 3 ساتھی زخمی ہوگئے ۔ واقعے کے بعد مقتول وقاص کے اہل خانہ نے احتجاج کرتے ہوئے لاری اڈا پر ٹریفک بلاک کردی ۔

مظاہرین کے احتجاج کے بعد آئی جی پنجاب نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے آر پی او فیصل آباد اور ایڈیشنل آئی جی پٹرولنگ سے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے میں ملوث پٹرولنگ اہلکاروں کو حراست میں لے لیا گیا ہے ۔ ناکے پر موجود سب انسپکٹر شاہد منظور اور 2 کانسٹیبل حراست میں لیے گئے ہیں ۔

(جاری ہے)

پولیس کا کہنا ہے کہ اہلکاروں نے اشارے سے گاڑی کو روکا لیکن انہوں نے گاڑی نہ روکی ۔

مقتول وقاص اور اس کے ساتھیوں نے شراب پی رکھی تھی ۔ اگر پولیس اہکاروں کی غلطی پائی گئی تو ضرور کارروائی ہو گی۔ دوسری جانب بتایا گیا ہے کہ مقتول وقاص ایک ایس ایچ او کا رشتہ دار تھا ۔ وقاص فیصل آباد کے علاقے سمندری کا رہائشی تھا ۔ زخمیوں کو ہسپتال پہنچایا گیا ہے ، جبکہ مقتول کی لاش کو بھی پوسٹ مارٹم کے لیے بھجوا دیا گیا ہے ۔ واضح رہے کہ اس قسم کا ہی ایک واقعہ گزشتہ دنوں اسلام آباد میں پیش آیا جہاں اے ٹی ایس اہلکاروں کی فائرنگ سے 21 سالہ نوجوان اسامہ ستی جاں بحق ہوگیا تھا۔

اس کے قتل کے مقدمے میں 5 اہلکاروں کو گرفتار کیا گیا تھا۔ بے گناہ شہری کے قتل کے جرم میں پولیس اہلکار پولیس کی تحویل میں ہیں جبکہ وزیراعظم کی جانب سے اسلام آباد واقعے پر اعلیٰ تحقیقاتی کمیشن بھی بنایا گیا تھا۔