جدہ ،150نجی سکولوں کے بند ہونے کا خطرہ ،خلیجی سرمایہ کاروں کی صورتحال سے فائدہ اٹھاتے ہوئے مبینہ سکول خریدنے کی پیشکش

بدھ مئی 21:55

جدہ (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ بدھ مئی ء) سعودی شہر جدہ میں 150نجی سکولوں کے بند ہونے کا خطرہ شدت اختیار کر گیا۔ خلیجی سرمایہ کاروں نے صورتحال سے فائدہ اٹھاتے ہوئے مبینہ سکول خریدنے کی پیشکش کر دی۔میڈیا رپورٹ کے مطابق متعدد سکولوں کے مالکان نے توجہ دلائی ہے کہ ان دنوں صادر ہونیوالے فیصلوں نے سکولوں میں سرمایہ لگانے والوں میں تشویش پھیلا دی ہے۔

انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ آنیوالے دنوںمیں یا تو غیر ملکی سرمایہ کارسکولوں پر قابض ہو جائیں گے یا غیر روایتی سرمایہ کار اس میں حصہ لینے لگیں گے جس سے تعلیم و تربیت کا ماحول متاثر ہوگا۔جدہ میں نجی سکولوں کی کمیٹی کی رکن عبیر غزاوی نے کہا کہ اس طرح کے خدشات بہت زیادہ ہیں کہ ایسے لوگ سکولوں کے مالک بن جائینگے جنہیں تعلیم و تربیت سے کوئی دلچسپی نہیں، اس سے 150سے زیادہ سکول بند ہو سکتے ہیں۔

(جاری ہے)

غزاوی نے توجہ دلائی کہ نجی سکولوں کے مالکان نے وزیرتعلیم سے درخواست کی ہے کہ وہ سکولوں کو درپیش مسائل حل کرنے کیلئے مداخلت کریں۔انہوں نے کہا کہ وزیر تعلیم سے یہ مطالبہ بھی کیا گیا ہے کہ نجی اور انٹرنیشنل سکولوں میں بعض مضامین پڑھانے والے سعودی اساتذہ مہیا نہیں ہیں لہٰذا یا تو اس کمی کو پورا کرنے کیلئے سکولوں کو ویزے جاری کئے جائیں یا مملکت میں مقیم غیر ملکیوں کی بیگمات کیساتھ ملازمت کے معاہدے کرنے کی اجازت دی جائے۔غزاوی نے کہا کہ بعض نجی سکول بند ہو چکے ہیں اور دیگر بند ہونیوالے ہیں۔ انہوں نے تحفیظ القرآن کے سکولوں کے مسائل کی جانب بھی توجہ مبذول کرائی۔

Your Thoughts and Comments