لاہور ہائیکورٹ ، ڈرگ ایکٹ نظر انداز کر کے ہومیو پیتھک ادویات تیار کرنیوالی فیکٹریوں کی بندش کیخلاف درخواست پر ڈپٹی اٹارنی جنرل عدالتی معاونت کیلئے طلب

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔21اکتوبر 2014ء) لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے ڈرگ ایکٹ نظر انداز کر کے ہومیو پیتھک ادویات تیار کرنے والی فیکٹریوں کی بندش کے خلاف دائر درخواست پر ڈپٹی اٹارنی جنرل کو عدالتی معاونت کے لئے طلب کر لیا۔

(جاری ہے)

منگل کے روز ہونے والی کیس کی سماعت میں گزار کمپنیوں کی جانب سے عدالت کو آگاہ کیا گیا کہ ڈرگ انسپکٹروں نے انکی فیکٹریوں پر قانون کے برعکس چھاپے مارئے اور انہیں کسی قانونی جواز کے برعکس سیل کر دیا۔

انہوں نے کہا کہ ڈرگ ایکٹ کے تحت ڈرگ انسپکٹر صرف ایلوپیتھی فیکٹریوں پر چھاپے مار سکتے ہیں۔وفاقی ڈرگ اتھارٹی کی جانب سے عدالت کو آگاہ کیا گیاڈرگ اتھارٹی آف پاکستان ایکٹ کے تحت ڈرگ انسپکٹروں کے اختیارات میں اضافہ کر تے ہوئے انکا دائرہ اختیار بڑھا دیا گیا ہے۔جس پر عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل کو عدالتی معاونت کے لئے طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کر دی۔

Your Thoughts and Comments