بند کریں
صحت صحت کی خبریں عوام کو معیاری صحت اور جدید تعلیم کی سہولتیں فراہم کرنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے‘رانا ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 01/02/2015 - 19:59:02 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 18:44:09 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 17:46:43 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 17:21:47 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 17:16:56 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 17:15:13 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 16:45:22 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 15:50:00 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 15:40:56 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 14:45:45 وقت اشاعت: 01/02/2015 - 14:07:34

عوام کو معیاری صحت اور جدید تعلیم کی سہولتیں فراہم کرنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے‘رانا محمد ارشد

حکومت نے صحت و تعلیم کے شعبو ں اور بہبود آبادی کے پروگرامز کے لیے ریکارڈ فنڈزرکھے ہیں‘پارلیمانی سیکرٹری انفارمیشن

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتاز ترین ۔ 1فروری 2015ء ) پارلیمانی سیکرٹری انفرمیشن و کلچر رانا محمد ارشد نے کہا ہے کہ عوام کو معیاری صحت اور جدید تعلیم کی سہولتیں فراہم کرنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے اور حکومت نے صحت و تعلیم کے شعبو ں اور بہبود آبادی کے پروگرامز کے لیے ریکارڈ فنڈز ہیں، صوابدیدی فنڈز 95فیصد لوگوں کے علاج معالجہ اور انتہائی غریب افراد کی مالی امداد پر خرچ ہوتے ہیں، بڑھتی ہوئی آبادی کے پیش نظر پاکستان دنیا میں آبادی کے لحاظ سے چھٹا بڑا ملک بن گیا ہے اور پنجاب کی آبادی 29 سال بعدجبکہ لاہور کی آبادی 20 سال بعد دوگنی ہو جائے گی۔

پارٹی ورکرز سے گفتگو کرتے ہوئے رانا محمد ارشد نے کہا کہ ترقی پذیر ممالک کے مسائل لامحدود اور وسائل بہت کم ہیں اور بڑھتی ہوئی آبادی کے پیش نظراقتصادی و سماجی مسائل میں اضافہ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے عوام کو پاپولیشن ویلفیئر پروگرامز سے آگاہی اور مستفید ہونے کے لئے صوبہ میں 15 سو فیملی ویلفیئر سنٹرز ، 117 موبائل سروس یونٹس، 118 فیملی ہیلتھ کلینک، 1456 سوشل موبلائزرزودیگر سہولیات کی خدمات فراہم کی ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ بڑھتی ہوئی آبادی اقتصادی وصحت کے مسائل بھی پیدا کر رہی ہے اور دنیا میں غذائی قلت کے شکار لوگوں کی تعداد 7 کروڑ 70 لاکھ سے بڑھ گی ہے اور ترقی پذیر ممالک کا ہر چھٹا فرد غذائی قلت کا شکار ہے جبکہ 49 ملین لوگ خط غربت سے نیچے زندگی بسر کر رہے ہیں اور ہر 10 ہزار ماؤں میں سے 500 مائیں دوران زچگی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھتی ہیں۔ اسی طرح 1000 بچوں میں سے 77 بچے دوران پیدائش وفات پا جاتے ہیں۔

58 ملین آبادی کو پینے کا صاف پانی میسر نہیں جبکہ 49 ملین لوگ صرف ایک کمرے کے گھر میں رہائش پذیر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگلے چار سالوں میں ہم پنجاب کا گروتھ ریٹ 7فیصد پر لے کر جانا چاہتے ہیں اورپنجاب کے موجودہ بجٹ کے نتیجے میں 70لاکھ سے زائد افراد خط غربت سے اوپر آجائیں گے جبکہ 40لاکھ نوجوانوں کو روزگار کے مواقع بھی میسر ہوں گے اس کے علاوہ 20لاکھ افراد کو فنی تربیت فراہم کی جائے گی تاکہ وہ اپنے پاؤں پر کھڑے ہوسکیں۔

01/02/2015 - 17:15:13 :وقت اشاعت