بند کریں
صحت صحت کی خبریںدنیا بھر میں وبائی امراض کے پھیلاؤ میں اضافہ‘ 1970ء سے لے کر اب تک 39نئی بیماریاں سامنے آئیں۔ ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 25/08/2007 - 11:16:31 وقت اشاعت: 24/08/2007 - 12:41:27 وقت اشاعت: 23/08/2007 - 18:46:02 وقت اشاعت: 23/08/2007 - 12:54:22 وقت اشاعت: 23/08/2007 - 11:14:24 وقت اشاعت: 23/08/2007 - 11:14:00 وقت اشاعت: 22/08/2007 - 20:31:45 وقت اشاعت: 22/08/2007 - 12:03:20 وقت اشاعت: 21/08/2007 - 17:09:59 وقت اشاعت: 20/08/2007 - 19:55:42 وقت اشاعت: 20/08/2007 - 12:15:07

دنیا بھر میں وبائی امراض کے پھیلاؤ میں اضافہ‘ 1970ء سے لے کر اب تک 39نئی بیماریاں سامنے آئیں۔ ڈبلیو ایچ او

نیویارک (ٍٍاردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین23 اگست 2007) اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں وبائی امراض کا پھیلاؤ پہلے کی نسبت بہت تیزی سے ہورہا ہے‘ جس رفتار سے بیماریاں سامنے آرہی ہیں تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی‘1970 سے لے کر اب تک 39نئی بیماریاں سامنے آئی ہیں۔ برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے عالمی ادارہ صحت(ڈبلیو ایچ او)کیطرف سے سالانہ رپورٹ جاری کی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وبائی امراض کا پھیلاوٴ پہلے سے کئی زیادہ تیزی کے ساتھ ہو رہا ہے۔

محفوظ مستقبل کے عنوان کے تحت جاری کی گئی اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نئی بیماریاں جس رفتار سے سامنے آ رہی ہیں اس کی تاریخ میں پہلے کوئی نظیر نہیں ملتی۔ رپورٹ کے مطابق 1970ء سے اب تک 39 نئی بیماریاں سامنے آئی ہیں جبکہ پچھلے پانچ سالوں میں ڈبلیو ایچ او نے پولیو، ہیضہ اور برڈ فلو سمیت ایک ہزار ایک سو وبائی امراض کی نشاندہی کی ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ یہ انتہائی بے وقوفی اور لاپروائی ہوگی اگر فرض کر لیا جائے کہ ایڈز، ایبولا یا سرس جیسی خطرناک کوئی اور بیماری اب سامنے نہیں آئے گی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سالانہ دو ارب دس کروڑ لوگ ہوائی سفر کرتے ہیں، جس سے ایڈز، سرس (سانس کی بیماری) اور مہلک ایبولا بخار کے پھیلنے کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔ڈبلیو ایچ او کی سالانہ رپورٹ میں حکومتوں سے بھی کہا گیا ہے کہ وہ وبائی امراض کے پھیلاوٴ کو نہ چھپائیں کیونکہ ان کے پھوٹنے کے واقعات کی تقریباً نصف اطلاعات عالمی ادارہ صحت کو ذرائع ابلاغ سے ملتی ہیں۔
23/08/2007 - 11:14:00 :وقت اشاعت