بند کریں
صحت صحت کی خبریں محکمہ صحت سمیت دیگر اداروں میں آہستہ آہستہ بہتری آرہی ہے ، ڈاکٹرعبدالمالک بلوچ
زیادہ سے ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 06/05/2015 - 14:00:36 وقت اشاعت: 06/05/2015 - 13:54:46 وقت اشاعت: 06/05/2015 - 12:45:04 وقت اشاعت: 06/05/2015 - 11:38:42 وقت اشاعت: 05/05/2015 - 22:48:16 وقت اشاعت: 05/05/2015 - 22:00:51 وقت اشاعت: 05/05/2015 - 21:11:30 وقت اشاعت: 05/05/2015 - 20:45:13 وقت اشاعت: 05/05/2015 - 20:34:58 وقت اشاعت: 05/05/2015 - 20:16:24 وقت اشاعت: 05/05/2015 - 19:53:46

محکمہ صحت سمیت دیگر اداروں میں آہستہ آہستہ بہتری آرہی ہے ، ڈاکٹرعبدالمالک بلوچ

زیادہ سے زیادہ تعلیم پرتوجہ دی جائے، جمہوری لوگ ہیں فیصلے جمہوری انداز میں کرنے چاہئیں،وزیراعلی ٰ کااسمبلی میں خطاب

کوئٹہ ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 05 مئی۔2015ء ) وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا ہے کہ نصیر آباد میں تعلیم کی حالت بہت خراب ہے اور ہمیں بے نظیر ہسپتال کے شیر بھی کم مل رہے ہیں ۔ اس سلسلے میں وزیر اعظم کو خط لکھ دیا گیا ہے کہ ہمارے شیر بڑھایا جائے انہو ں نے کہا کہ گزشتہ روز ہم نے محکمہ صحت کے بارے میں پانچ گھنٹے تک ایک اہم مٹنگ کی جس میں اہم مسائل کے بارے میں فیصلے کئے گئے انہوں نے کہاکہ نصیر آباد سے تعلق رکھنے والے ایم پی اے سے میں کہتا ہوں کہ اپنے علاقے میں تعلیم کے بارے میں زیادہ سے زیادہ تر توجہ دینی چاہئے انہوں نے یہ بات منگل کے روز بلوچستان صوبائی اسمبلی کے اجلاس کے دوران کہی ۔

اسمبلی کا اجلاس دوروزہ وقفہ کے بعد ڈپٹی سپیکر میر عبدالقدوس بزنجوکی صدارت میں شروع ہوا پشتونخواء ملی عوامی پارٹی کے رکن نصر اﷲ زیرے نے بلوچستان صوبائی اسمبلی کے باہر گیٹ پر ہرنائی سے تعلق رکھنے والے ایک مائنز کے مالکان کے احتجاج کو مستر د کرتے ہوئے کہاکہ ان کے پاس کسی بھی رکن صوبائی اسمبلی کو بات چیت کیلئے نہیں جانا چاہئے وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا کہ ہم لوگ جمہوری ہیں ہمیں فیصلے جمہوری انداز میں کرنے چاہئے انہوں نے کہا کہ میرے خلاف روزانہ مردہ باد کے جلوس نکالے جاتے ہیں ایک دفع جلو س میں شریک ایک شخص نے مجھے کہا کہ میں آپ کو گرفتار کر سکتا ہوں میں نے کہا کہ میں کھڑا ہوں مجھے گرفتار کرے وزیر اعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ اسمبلی کے گیٹ کے باہر جنا ب اسپیکر جو ہرنائی سے تعلق رکھنے والے مائنز ہنر ز جو مظاہر ہ کرر ہے ہیں ان کے پاس ارکان کو بھیجا جائے جس پر سپیکر نے صوبائی وزیر داخلہ میر سرفراز بگٹی وزیر اعلیٰ کے مشیر خزانہ میر خالد لانگو کو ان کے پاس بھیجا مزاکرات کے بعد مائنز ہنرز کے چار ارکان کو وزیر اعلیٰ سے ملاقات کیلئے ان کے چیمبر میں لایا گیا صوبائی وزیر ایکسائز شیخ جعفر خان مندوخیل نے ایوان کو بتایا کہ اسمبلی کے باہر آل پارٹی کانفرنس کے شرکاء مظاہر ہ کر رہے ہیں انکا موقف ہے کہ گوادر کاشغر روٹ کے بارے میں حکومت واضح پالیسی بیان جاری کریں جس ڈپٹی سپیکر نے جعفر خان مندوخیل اور انجینئر زمرک خان کو ان سے اور وزیر داخلہ کو ان کے پاس بات چیت کیلئے بھیجا مگر آ ل پارٹیز کانفرنس نے موقف اختیار کیا کہ وہ وزیر اعلیٰ بلوچستان سے ہی بات چیت کرینگے جس پر ان سے بات چیت کیلئے جانے والے صوبائی وزراء اور مشتمل وفد واپس آگیا وزیر اعلیٰ بلوچستان نے اس موقع پر کہا اگر ایوان فیصلہ کرلے کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان ہی ان سے مزاکرات کیلئے جائینگے تو میں جانے کیلئے تیار ہوں اسمبلی کے ارکان نے متفقہ فیصلہ کیا کہ وزیر اعلیٰ نہیں جائینگے آل پارٹیز کانفرنس میں شریک آفراد سے بات چیت کیلئے صرف کمیٹی کے ارکان بات چیت کیلئے جائینگے ۔

05/05/2015 - 22:00:51 :وقت اشاعت