بند کریں
صحت صحت کی خبریں تمباکو نوشی ذہنی انتشار یا شیزو فرینیا کا سبب بن سکتی ہے،تحقیق

صحت خبریں

وقت اشاعت: 15/07/2015 - 11:35:39 وقت اشاعت: 14/07/2015 - 16:39:11 وقت اشاعت: 14/07/2015 - 15:28:31 وقت اشاعت: 13/07/2015 - 13:17:02 وقت اشاعت: 13/07/2015 - 12:25:58 وقت اشاعت: 11/07/2015 - 16:48:25 وقت اشاعت: 11/07/2015 - 13:07:26 وقت اشاعت: 10/07/2015 - 16:35:08 وقت اشاعت: 09/07/2015 - 13:14:26 وقت اشاعت: 09/07/2015 - 13:14:26 وقت اشاعت: 09/07/2015 - 06:24:06

تمباکو نوشی ذہنی انتشار یا شیزو فرینیا کا سبب بن سکتی ہے،تحقیق

لندن ۔ 11 جولائی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 11 جولائی۔2015ء) تمباکو نوشی ذہنی انتشار یا شیزو فرینیا کا سبب بن سکتی ہے اور اس معاملے میں مزید تحقیق کی ضرورت ہے۔برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق یہ بات لندن کے کنگز کالج سے منسلک ایک ٹیم کی تحقیق میں کہی گئی ہے ۔تحقیق کے مطابق تمباکو نوشوں میں شیزوفرینیا کا مرض پیدا ہونے کے امکانات دوسرے لوگوں کے مقابلے میں نہ صرف زیادہ ہوتے ہیں بلکہ وہ قدرے کم عمر میں اس مرض کا شکار ہو سکتے ہیں۔

ذہنی امراض کے جریدے ’لینسٹ سائیکائٹری‘ میں شائع ہونے والی ایک تحقیق میں 61 مختلف تحقیقات کا جائزہ لیا گیا ہے۔ اس جائزے کے مطابقہ تمباکو نوشوں میں شیزوفرینیا کے امکانات زیادہ ہونے کی وجہ شاید یہ ہو کہ تمباکو میں شامل نکوٹین سے تمباکو نوشوں کے دماغ میں تبدیلی آ جاتی ہے۔ماہرین کہتے ہیں کہ اس تحقیق میں جو نظریہ پیش کیا گیا ہے وہ ’خاصا مضبوط‘ ہے لیکن اس سلسلے میں مزید تحقیق کی ضرورت ہے۔

اکثر ماہرین کا یہ کہنا رہا ہے کہ شیزو فرینیا کے مریضوں میں سگریٹ نوشی کے امکانات اس لیے زیادہ ہوتے ہیں کہ یہ لوگ دماغ کے اندر آنے والی آوازوں اور وہم کی بیماری ) سے تنگ آ کر سگریٹ کا استعمال زیادہ کر لیتے ہیں۔کنگز کالج کی ٹیم نے اپنی تحقیق میں 14,555 تمباکو نوشوں اور 273,162 غیر تمباکو نوشوں کے اعداد و شمار کا جائزہ لیا ہے ۔

11/07/2015 - 16:48:25 :وقت اشاعت