بند کریں
صحت صحت کی خبریںبرطانیہ میں والدین کوکھانے میں شکرکی مقدارجانچنے کے لیے موبائل فون میں مفت ایپ ڈاوٴن لوڈ ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 05/01/2016 - 14:47:43 وقت اشاعت: 05/01/2016 - 13:50:43 وقت اشاعت: 05/01/2016 - 13:49:55 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 16:38:28 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 16:31:17 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 16:22:03 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 16:15:26 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 14:55:28 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 14:37:11 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 14:37:11 وقت اشاعت: 04/01/2016 - 14:37:11

برطانیہ میں والدین کوکھانے میں شکرکی مقدارجانچنے کے لیے موبائل فون میں مفت ایپ ڈاوٴن لوڈ کرنے کی ترغیب

لندن(اُردو پوائنٹ تازہ ترین ۔۔ آئی پی اے ۔۔ 04 جنوری۔2015ء) برطانیہ میں والدین کو اپنے موبائل فون میں ایک مفت ایپ ڈاوٴن لوڈ کرنے کی ترغیب دی جارہی جس کے ذریعے وہ بازار میں دستیاب کھانے پینے کی اشیا میں موجود شکر کی مقدار جان سکتے ہیں۔انگلینڈ پبلک ہیلتھ کی جانب سے متعارف کروائی گئی اس ایپ کو’شوگر سمارٹ ایپ‘ کا نام دیا گیا ہے، جو غذائی اشیا کی پیکنگ پر موجود بار کوڈ کو سکین کرنے کے بعد اس میں موجود شکر کی کل مقدار کو کیوبز یا گرام میں بتا دیتی ہے۔

ادارے کے حکام کو امید ہے کہ اس ایپ کے ذریعے لوگوں میں صحت مند غذاوٴں کے استعمال کا رجحان بڑھے گا اور وہ دانتوں کی بیماریوں، موٹاپے اور ٹائپ ٹو ذیابیطس کا مقابلہ کرسکیں گے۔یہ ایپ ادارے کی نئی تشہیری مہم جینج فور لائف کا حصہ ہے۔اس مہم کے ذریعے یہ بھی بتایا گیا ہے کہ چھوٹی عمر کے بچے اپنی غذاوٴں میں حد سے تین گنا زیادہ شکر استعمال کررہے ہیں۔

مہم میں بتایا گیا ہے کہ چار سے دس سال کی عمر کے بچے ہر سال اوسطاً 22 کلو گرام زائد شکر کھا جاتے ہیں۔اس زائد شکر کا وزن 5500 کیوبز بنتا ہے جو ایک پانچ سالہ بچے کے اوسط وزن سے بھی زیادہ ہے۔اس ایپ کا مقصد لوگوں میں آگہی پیدا کرنا ہے کہ ان کی روزمرہ کی غذا میں کتنی شکر موجود ہے۔یہ ایپ ملک میں دستیاب 75 ہزار سے زیادہ مصنوعات پر کام کرتی ہے جس سے والدین ان مصنوعات کو خریدنے سے قبل ہی ان میں موجود شکر کی مقدار کا اندازہ لگا کر یہ فیصلہ کرسکتے ہیں کہ ان کو خریدنا ان کے بچوں کی صحت کے لیے کتنا نقصان دہ ہوسکتاہے۔

پبلک ہیلتھ انگلینڈ کی چیف غذائی ماہر ڈاکٹر ایلیسن ٹیڈ سٹون کا کہنا ہے کہ بچے اپنی غذاوٴں میں شکر کا بہت زیادہ استعمال کررہے ہیں جس کی وجہ سے ان میں دانت سڑنے، وزن بڑھنیاور آگے جاکر کئی مزید خطرناک بیماریوں کے پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔زائد وزن اور موٹاپے کا شکار بالغ افراد میں دل کی پیماریوں، ٹائپ ٹو ذیابیطس اور کئی قسم کے سرطان پیدا ہونے کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔

ڈاکٹر ایلیسن کا کہنا ہے کہ وہ ایک اقدام جس پر میں والدین کی بھرپور حوصلہ افزائی کروں گی، وہ یہ ہے کہ وہ اپنے بچوں کی غذاوٴں میں چینی سے بھرپور مشروبات کو کم چینی والے مشروبات، پانی یا پھر کم چکنائی والے دودھ سے تبدیل کردیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ اس ایپ کے ذریعے لوگوں کو یہ جان کر شاید حیرت ہوگی کچھ برانڈ کے دہی اور پھلوں کے مشروبات میں بھی شکر موجود ہوتی ہے۔شوگر سمارٹ ایپ کو ایپ سٹور کے ذریعے موبائل میں با آسانی ڈاوٴن لوڈ کیا جاسکتا ہے۔

04/01/2016 - 16:22:03 :وقت اشاعت