بند کریں
صحت صحت کی خبریںبرازیل، کولمبیا اور جنوبی امریکی ممالک میں ذیکا وائرس سامنے آگیا

صحت خبریں

وقت اشاعت: 26/01/2016 - 16:39:27 وقت اشاعت: 26/01/2016 - 15:22:11 وقت اشاعت: 26/01/2016 - 14:25:34 وقت اشاعت: 26/01/2016 - 14:15:07 وقت اشاعت: 26/01/2016 - 13:18:10 وقت اشاعت: 26/01/2016 - 12:00:55 وقت اشاعت: 26/01/2016 - 11:54:28 وقت اشاعت: 26/01/2016 - 11:54:28 وقت اشاعت: 25/01/2016 - 16:42:01 وقت اشاعت: 25/01/2016 - 15:18:49 وقت اشاعت: 25/01/2016 - 15:18:11

برازیل، کولمبیا اور جنوبی امریکی ممالک میں ذیکا وائرس سامنے آگیا

برازیلیا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔26 جنوری۔2016ء)برازیل، کولمبیا اور جنوبی امریکا کے دیگر ملکوں میں آج کل ایک نئی بیماری ذیکا وائرس سامنے آئی ہے جس کے نتیجے میں نومولود بچوں میں پیدائشی نقص سامنے آ رہے ہیں۔وائرس کے خطرے کے پیش نظر امریکا نے اپنی حاملہ خواتین کو برازیل سمیت بیس ملکوں کے سفر سے منع کر دیا ہے۔ اس وائرس کی علامات میں بخار، آشوب چشم اور سر درد شامل ہیں۔

اب تک اس وائرس کا کوئی علاج یا ویکسین بھی دستیاب نہیں۔ذیکا وائرس افریقہ سے شروع ہوا تھا اور اس کے پھیلنے کی خبر پہلی مرتبہ مئی 2015 میں برازیل سے آئی تھی۔ صرف برازیل میں چار ہزار ایسے بچے پیدا ہو چکے ہیں جو اس بیماری سے متاثر ہیں۔ ان میں سے متعدد بچے چھوٹے سر کے پیدا ہوئے ہیں۔کولمبیا میں تیرہ ہزار بچے اس سے متاثر ہوئے ہیں۔ کولمبیا، ایکواڈور، ایل سلوا ڈور اور جمیکا کے حکام نے خواتین سے کہا ہے کہ وہ ذیکا وائرس کے بارے میں مزید تفصیلات سامنے آنے تک حمل ٹھہرانے سے گریز کریں۔

امریکی محکمہ صحت نے حاملہ خواتین کو برازیل، کولومبیا اور گواتے مالا سمیت 20 ملکوں کے سفر سے منع کیا ہے جہاں اس بیماری کے کیس سامنے آئے ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ ذیکا وائرس بھی ایک خطرناک مچھر کے کاٹنے سے ہوتا ہے۔

26/01/2016 - 12:00:55 :وقت اشاعت