اُردو پوائنٹ پاکستان کراچیکراچی کی خبریںپی آئی اے کے چیف فنانس افسر کو عہدے سے ہٹا دیاگیا

پی آئی اے کے چیف فنانس افسر کو عہدے سے ہٹا دیاگیا

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اگست2018ء)قومی ایئرلائن(پی آئی ای)کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈاکٹر مشرف رسول سیاں نے پی آئی اے کے چیف فنانشل آفیسر نیر حیات کو فوری طور پر ان کے منصب سے ہٹا کر چیف فنانشیل آفیسر کا چارج جنرل منیجر بجٹ اسد عباس کو اس اہم ترین عہدے کا اضافی چارج دے دیا ہے۔ذرائع کے مطابق نیر حیات کو سی ایف او کے عہدے سے ہٹانے کا نوٹیفکیشن رات گئے جاری ہوا۔

پی آئی اے ترجمان کے مطابق نیر حیات کو سی ایف او کے عہدے سے ہٹا کر چیف اسپیشل پروجیکٹ بنا دیا گیاہے، اب وہ پی آئی اے کے اسپیشل آڈٹ کی نگرانی کریں گے۔دوسری جانب جنرل منیجر بجٹ اسد عباس کو پی آئی اے کا قائم مقام سی ایف او مقرر کیا گیا ہے۔پی آئی اے ذرائع کے مطابق نیر حیات نے سی ای او مشرف رسول سیاں پر عائد مقدمات کے لیے وکلا کی فیس پی آئی اے فنڈ سے ادا کرنے سے انکار کیا تھا۔

(خبر جاری ہے)

ذرائع کے مطابق عدالتی حکم کے برخلاف سی ای او ڈاکٹر مشرف رسول نے اپنے وکیل کو 44 لاکھ روپے کی ادائیگی پر اصرار کیا تھا، جسے نیر حیات نے کلیئر کرنے سے انکار کردیا تھا۔دوسری جانب ذرائع نے بتایا کہ 10 اگست کو نیر حیات اور شعبہ فنانس کے جنرل منیجرز نے پی آئی اے کے چیئرمین اور بورڈ آڈٹ کمیٹی کے نام ایک مشترکہ خط بھی تحریر کیا تھا، جس میں ان تمام مالی بے ضابطگیوں کی طرف توجہ دلائی گئی تھی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

کراچی شہر کی مزید خبریں