ایمرجنسی آپریشن سینٹر برائے پولیو سندھ کی جانب سے سندھ بھر میں 24 جنوری سے 30جنوری2022 تک پولیو مہم چلائی جائیگی

ہفتہ 22 جنوری 2022 19:01

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 22 جنوری2022ء) ایمرجنسی آپریشن سینٹر برائے پولیو سندھ کی جانب سے سندھ بھر میں 24 جنوری سے 30جنوری2022 تک پولیو مہم چلائی جائے گی۔ یہ سال کی پہلی خصوصی پولیو مہم ہے جو پاکستان بھر میں چلائی جا رہی ہے۔ اس مہم کے دوران سندھ کے 20 اضلاع میں تقریبا 58 لاکھ بچوں کو پولیو سے بچا کے قطرے پلائے جائیں گے جس میں کراچی کے تمام اضلاع میں 20لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو سے بچاو کے قطرے پلائے جائیں گے۔

اگست2020 سے لے کر اب تک تقریبا ہر ڈیڑھ ماہ بعد پولیو مہم چلائی گئی ہے جس کی وجہ سے پولیو کیسز میں خاطر خواہ کمی آئی ہے اور گٹر کے پانی میں بھی پولیو وائرس کی موجودگی میں کمی آئی ہے۔سندھ میں جولائی 2020 سے اب تک ایک بھی پولیو کیس رپورٹ نہیں کیا گیا اور گٹر کا پانی بھی جولائی 2021 سے پولیو وائرس سے پاک ہے۔

(جاری ہے)

2021 میں پاکستان میں ایک پولیو کیس رپورٹ کیا گیا ہے جس کا تعلق بلوچستان سے ہے۔

اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ اگر باقاعدگی سے پولیو مہم چلائی جائے اور والدین اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں تو پولیو سے نجات پائی جا سکتی ہے۔ والدین سے گزارش ہے کہ آگے بڑھ کر اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے ضرور پلائیں، گھر آنے والی ٹیموں سے تعاون کریں اور میڈیا سے گزارش ہے کہ اس کے بارے میں آگاہی فراہم کریں۔ دسمبر2021 کی پولیو کیمپین میں99 فیصد ہدف حاصل کیا گیا۔پولیو ویکسین آپ کے بچوں کو پولیو سے بچانے کا سب سے محفوظ اور موثر طریقہ ہے، ٹیمیں جب آپ کی گھر پر آئیں تو ان کے ساتھ تعاون کریں۔ یاد رکھیں پولیو کا کوئی علاج نہیں ہے لیکن ویکسینیشن کے ذریعے پولیو کا پھیلا آسانی سے روکا جا سکتا ہے ۔ پاکستان کے مستقبل کو بچانے اور پولیو کے خاتمے میں مدد کیجئے۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments