پشاور کے بعد لاہور میں بھی عید پر زائد گوشت کھانے پر ہزاروں افراد اسپتال پہنچ گئے

لاہور میں عید کے 3 دن میں تقریباً 1200 کیس اسپتالوں میں رپورٹ، جنرل اسپتال میں عید کے 3 روز گیسٹرو کے 823 مریض داخل ہوئے جبکہ میو اسپتال میں 145مریض لائے گئے، محکمہ صحت پنجاب

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری ہفتہ 24 جولائی 2021 22:57

پشاور کے بعد لاہور میں بھی عید پر زائد گوشت کھانے پر ہزاروں افراد اسپتال ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جولائی2021ء) لاہور میں عید کے 3 دنوں میں زائد گوشت کھانے سے شہری مشکل سے دوچار، پیٹ میں درد کی وجہ سے ہزاروں افراد اسپتال پہنچ گئے- تفصیلات کےمطابق لاہور میں عید کے تین دن میں زائد گوشت کھانے اور پیٹ کے امراض کا شکار سیکڑوں افراد اسپتال پہنچ گئے۔ محکمہ صحت پنجاب کے مطابق لاہور میں عید کے 3 دن میں تقریباً 1200 کیس اسپتالوں میں رپورٹ ہوئے۔

محکمہ صحت پنجاب کا کہنا ہے کہ پیٹ کے امراض والےکیسزکی تعداد گزشتہ سالوں کی نسبت کم رہی، اس موسم میں معمول سے زیادہ مریض اسپتالوں میں آتے ہیں۔ حکام نے بتایا کہ جنرل اسپتال میں عید کے 3 روز گیسٹرو کے 823 مریض داخل ہوئے جکہ میو اسپتال میں زیادہ گوشت کھانے سے بیمار145مریض لائے گئے۔ حکام کے مطابق سروسز اسپتال میں 70 اور جناح اسپتال میں بھی پیٹ کے 26 مریض اسپتال آئے۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ گزشتہ روز خیبرپختونخواہ میں عیدالاضحیٰ پر زیادہ گوشت کھانے پر7 ہزار سے زائد افراد ہسپتال پہنچ گئے تھے، پشاور ہسپتالوں میں زیادہ گوشت کھانے پر معدے اورپیٹ درد شکایات کے مریضوں کو لایا گیا، زیادہ تر مریضوں کو ابتدائی طبی امداد کے بعد ڈسچارج کردیا گیا۔ بتایا گیا ہے کہ لیڈی ریڈنگ ہسپتال اور خیبر ٹیچنگ ہسپتال میں عیدالاضحیٰ پر زیادہ گوشت کھانے پر معدے اورپیٹ درد شکایت کے باعث 7 ہزار سے زائد مریض داخل ہوئے۔

ان مریضوں کے بتانے پر پتا چلا کہ ان مریضوں سے زیادہ گوشت کھا لیا تھا، جس کی وجہ سے فوڈ پوائزنگ اور پیٹ درد کی شکایات ہوئیں۔ زیادہ تر مریضوں کو ابتدائی طبی امداد کے بعد ڈسچارج کردیا ہے۔ ان مریضوں میں لیڈی ریڈنگ ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں زیادہ گوشت کھانے والے 2 ہزار500 مریضوں کو لایا گیا۔اسی طرح خیبر ٹیچنگ ہسپتال میں زیادہ گوشت کھانے پر پیٹ درد شکایات کے 4500 سے زائد مریضوں کو لایا گیا، ان مرضوں میں 331 مریضوں کو ہسپتال میں داخل بھی کیا گیا۔

دوسری جانب گوجرانوالہ میں 8 سالہ بچی کو محلے دار نے مبینہ زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس کو اطلاع ملنے سے پہلے ہی ملزم محلہ چھوڑ کر فرار ہوگیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق پولیس نے بتایا کہ واقعہ گوجرانوالہ کے علاقہ تتلے عالی کے ایک محلے میں پیش آیا۔ والدین کے مطابق متاثرہ بچی محلے دار کے یہاں گوشت لینے گئی تھی، جب بچی گوشت لینے پہنچی تو اُس وقت ملزم گھر میں اکیلا تھا جس نے بچی کو زیادتی کا نشانہ بنایا۔ والدین کی درخواست پر ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرکے متاثرہ بچی کو میڈیکل کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments