ملتان جلسہ ،کارکنوں کی گرفتاری ،تشدد کیخلاف قائد جمعیت کے حکم پر 4دسمبر بعد نماز جمعہ عظیم الشان احتجاجی مظاہرہ ہوگا ،جمعیت علماء اسلام ضلع کوئٹہ

منگل دسمبر 23:39

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 01 دسمبر2020ء) جمعیت علماء اسلام ضلع کوئٹہ کے امیر مولانا عبد الرحمن رفیق سنیئر نائب امیر مولانا خورشیداحمد جنرل سیکریٹری حاجی بشیر احمد کاکڑ مولانا مفتی محمد روزی خان مولانا شیخ احمد جان مولانا محمد ہاشم خیشکی مولانا محمد ایوب حافظ مسعود احمد مولانا عبدالغفور مدنی مفتی عبدالسلام رئیسانی حافظ شبیر احمد مدنی حافظ سراج الدین حاجی ولی محمد بڑیچ ظفر اللہ کاکڑ میر سرفراز شاہوانی ایڈووکیٹ سالار حافظ مجیب الرحمن ملاخیل حاجی قاسم خان خلجی میر فاروق لانگو چوہدری محمد عاطف مولانا حافظ سردار محمد نورزئی مولانا مفتی محمد ابوبکر حافظ دوست محمد اور دیگرنے کہا ہے کہ 4دسمبر کو کوئٹہ میں عظیم الشان احتجاجی مظاہرہ ہوگا جس سے پی ڈی ایم کے قائدین خطاب کریں گے انہوں نے کہا ملتان کے جلسہ عام کے خلاف حکومتی سازشوں اور پرامن جمہوری کارکنوں کی گرفتاری اور ان پر تشدد کے خلاف پی ڈی ایم کے سربراہ قائد جمعیت مولانا فضل الرحمان کے حکم پر ملک کی طرح 4دسمبر بعد نماز جمعہ عظیم الشان احتجاجی مظاہرہ ہوگا جس میں تمام پارٹیوں کے کارکنان عوام الناس بڑی تعداد میں شرکت کرکے حکومت کے غیر آئینی اقدامات کی مذمت کریں گے انہوں نے کارکنوں اور قائدین کے خلاف مقدمات کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جعلی حکومت کے ظلم اور بربریت کے دن ختم ہونے والے ہیں انہوں نے کہا کہ ملک کے غریب عوام کو بے گھر کرنے اور ان کے منہ کا نوالہ چھیننے والے بہتری کی امیدیں دلانے کی بات کرتے ہوئے شرم کریں ملک کو جس قدر ڈبودیا ہے کہ اب آنے والے کئی سال بہتری ممکن نہیں مزید ملک میں انارکی اور شورش کامتحمل نہیں ہے کیونکہ قوم کا ہر فرد یہ جانتا ہے کہ مزید نااہل سلیکٹڈ حکومت کے دن گنے جاچکے ہیں وہ دور اب دور نہیں کہ عوام کی خواہش کے مطابق پاکستان چل پڑجائے انہوں نے کہا کہ نئے پاکستان کے نام پر دو سال کے اندر پاکستان کو کئی سال پرانا بنادیا اب پی ڈی ایم کے سربراہ قائد جمعیت مولانا فضل الرحمان کی کال لبیک کہتے ہوئے پاکستان کا مستقبل محفوظ بنانے کیلئے عوام کو ساتھ لے چلیں گے انہوں نے کہا کہ آج نااہل حکمرانوں کی وجہ سے ہر محاذ پر پاکستان دیوالیہ پن کا شکار ہے انہوں نے کہا کہ آج افسوس کا مقام ہے کہ کرونا وائرس کو جواز بنا کر ایک بار پھر ملک کو بند کرکے اقتدار کو طول دینا چاہتے ہیں ، انہوں نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام ایک محب وطن جماعت کی حیثیت سے ملک کے دفاع اور استحکام پر یقین رکھتے ہوئے عوام کی جمہوری آزادی کیلئے جدوجہد جاری رکھے گی، بلوچستان اسلام پسند عوام کا ناقابل تسخیر قلعہ ہے جس میں ناجائز طریقے سے شگاف ڈالنے والے آج پریشان ہیں اور عوام کو دینے کیلئے ان کے پاس کچھ بھی نہیں ہے، خون پسینے سے ملک کی خدمت کرنے والے آج بھی استحصال کا شکار ہیں، بلکہ روزگار چھین جانے سے خودکشی پر مجبور ہوچکے ہیں پاکستان کو ایک فلاحی ریاست میں تبدیل کرنے آئین کے دائرے میں رہتے ہوئے قوم کو بیدار کریگی جمعیت علماء اسلام سمجھتی ہے کہ یہ کٹھ پتلی حکومت ملک کی معاشی اور نظریاتی قاتل ہے انہوں نے کہا کہ ہماری آج کی جدوجہد سے ہی ہماری کل آنے والی نسل سکھ کا سانس لے پائیگی کیونکہ جمعیت علماء اسلام ملک میں حقیقی آزادی کے تصور کے ساتھ قوم کو لائحہ عمل دے کر آزادی کے نصب العین حاصل کرنے میں کامیاب ہوگی انہوں نے کہا کہ آزادی کے مقاصد کے حصول کیلئے ہماری جدوجہد جاری ہے دو قومی نظریہ اور اسلام کے نام پر بننے والے ملک میں اسلامی شعائر کی حفاظت کیلئے آج بھی ہماری جدو جہد جاری ہے، جمعیت علماء اسلام جمہوری انداز میں رہنے کیلئے عوام کو شرافت کی سیاست سے روشناس کرایا جمعیت علماء اسلام نے پاکستان میں دلیل اور پرامن سیاست کے فروغ کیلئے جو وصول متعارف کروائے وہ تمام جماعتوں کیلئے مشعل راہ ہے انہوں نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام آئین اور جمہوریت کی پاسدار ہونے کے ناطے تمام تر ناانصافیوں اوچھے ہتھکنڈوں کے باوجود ملک کے کروڑوں محکوم اور مظلوم عوام کو امن آئین اور جمہور کادرس دے رہی ہے انہوں نے کہا کہ نامعلوم عناصر کی تمام تر چیرہ دستیوں کے باوجود ملک کے استحکام وسلامتی کیلئے ہراول دستہ کردار ہمارا ہوگا ، انہوں نے پی ڈی ایم میں شامل تمام جماعتوں کے کارکنوں سے اپیل کی ہے کہ وہ 4دسمبر کے احتجاجی جلسہ عام میں بھر پور شرکت کریں۔

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments