لاہور کی ایم ایم عالم روڈ پر موجود ایک تہہ خانے میں لگژری گاڑیاں چھُپا دی گئیں

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین بدھ اپریل 11:45

لاہور کی ایم ایم عالم روڈ پر موجود ایک تہہ خانے میں لگژری گاڑیاں چھُپا ..
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 18 اپریل 2018ء) : نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے رپورٹر نے بتایا کہ چیف جسٹس نے سرکاری لگژری گاڑیوں پر از خود نوٹس لیا اور کہا تھا کہ ان تمام لوگوں کی تفصیلات دی جائیں جو لگژری گاڑیاں استعمال تو کر رہے ہیں لیکن ان کے پاس ایسی گاڑیاں استعمال کرنے کا اختیار نہیں ہے۔جس کےبعد پنجاب میں سرکاری لگژری گاڑیاں چھُپانے کا انکشاف ہوا۔

(جاری ہے)

رپورٹر نے بتایا کہ چیف جسٹس نےسماعت کے دوران کہا کہ پنجاب کے اندر ایم ایم روڈ کےسیون ون سی عمارت کے تہہ خانے میں ستائیس لگژری گاڑیاں چھپا دی گئی ہیں۔ یہ وہ گاڑیاں ہیں جو صاف پانی کے نام پر بلائی گئی تھیں۔ تمام سرکاری افسران اور بیوروکریٹس یہ گاڑیاں چلا رہے تھے ،لیکن چیف جسٹس کے از خود نوٹس پر ہی یہ گاڑیاں چھپا دی گئیں، سپریم کورٹ نے اس ضمن میں ریکارڈ طلب کر لیا ہے اور تمام تر تفصیلات دینے کے احکامات جاری کرتے ہوئے اٹارنی جنرل سے کہا کہ بتایا جائے کہ ان گاڑیوں کو چھُپانے کا حکم کس نے دیا اور یہ گاڑیاں کس کے کہنے پر تہہ خانے میں چھُپائی گئیں؟

متعلقہ عنوان :