لاہور، ٹرمپ کی قیادت میں امریکہ مکمل طور پر صہیونیت کی گود میں گر گیاہے،لیاقت بلوچ

ترکی نے بروقت اوآئی سی کا اجلاس بلایا ہے ، عالم اسلام کی قیادت وقت گزاری اور غیر موثر بیانیہ کی بجائے فلسطین ،کشمیر ،شام ، روہنگیا ، یمن کے مسائل کے حل کے لیے ٹھوس اقدامات کریں، سیکرٹری جنرل متحدہ مجلس عمل

جمعہ مئی 19:56

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) جماعت اسلامی پاکستان اور متحدہ مجلس عمل کے سیکرٹری جنرل،سابق ممبر قومی اسمبلی لیاقت بلوچ نے مقبوضہ بیت المقدس میں امریکی سفارتخانہ منتقل کرنے کے اقدام کو مسلم دشمنی ، عالمی فساد اور مذاہب کے درمیان نئی کشمکش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرمپ کی قیادت میں امریکہ مکمل طور پر صہیونیت کی گود میں گر گیاہے ۔

ترکی نے بروقت اوآئی سی کا اجلاس بلایا ہے ۔ عالم اسلام کی قیادت وقت گزاری اور غیر موثر بیانیہ کی بجائے فلسطین ،کشمیر ،،شام ،، روہنگیا ، یمن کے مسائل کے حل کے لیے ٹھوس اقدامات کریں ۔ عالم اسلام فلسطینیوں کی تحریک آزادی کے ساتھ ہے ۔ عالمی ادارے مسلم دشمنی ترک کریں اور انصاف و انسانی بنیادوں پر اقدامات کریں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجد اعلیٰ میں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

(جاری ہے)

لیاقت بلوچ نے بلوچستان میں کرنل سہیل عابد کی شہادت پر گہرے صدمے کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ فوج ، سیکورٹی فورسز اور ادارے لازوال قربانیاں دے رہے ہیں ۔ ریاست اور سیاست میں بے وقت کا تصادم دہشتگردوں کے لیے ریڈ کارپٹ بچھ گیاہے ۔ امن کے لیے ہزاروں انسانوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جانی چاہئیں ۔ قومی بیانیہ اور اقدامات قومی سلامتی کے تقاضوں سے ہم آہنگ بنائے جائیں ۔

لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ روزہ اسلام کا بنیادی رکن اور بندگی ٴرب کا اہم فریضہ ہے ۔ ماہ رمضان کا احترام اور عبادات کے ذریعے توبہ و استغفار جنت کے حصول کا بہترین ذریعہ ہے ۔ تقویٰ ہر نیکی کی بنیاد ہے ۔ ماہ مبارک میں مہنگائی ، ذخیرہ اندوزی اور اصراف اسلامی تعلیمات کے منافی ہے ۔ ماہ رمضان انفاق فی سبیل اللہ کا مہینہ ہے ۔ مخیر حضرات مستحق افراد کی مدد کو یقینی بنائیں ۔انہوں نے کہاکہ ملک کو معاشی بحرانوں سے نکالنے کے لیے کرپشن ، سود اور بیرونی قرضوں کی لعنت سے نجات دلانا ہوگی ۔ قرضے بے تحاشہ بڑھتے جارہے ہیں ۔ قرضوں سے ملکی معیشت اور عوام کے لیے نقصانات بڑھتے جارہے ہیں ۔ اس کا ازالہ اسلامی معاشی نظام ہی ہے ۔