نواز شریف کو سبق سکھانے کیلئے مجھے کیس میں گھسیٹا گیا، مریم نواز

منگل مئی 15:58

نواز شریف کو سبق سکھانے کیلئے مجھے کیس میں گھسیٹا گیا، مریم نواز
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نوازنے کہا ہے کہ نواز شریف کو سبق سکھانے کے لیے مجھے کیس میں گھسیٹا گیا اور مجھے ریفرنس میں الجھانے کی وجہ میرے والد کے اعصاب پر دباؤ ڈالنا ہے۔ پنجاب ہاؤس اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف ووٹ کو عزت دلانے کے لیے جہاد پر نکلے ہیں اور اس جہاد میں، میں ان کے ساتھ کھڑی ہوں۔

مریم نواز نے کہا کہ 'مجھے ریفرنس میں الجھانے کی وجہ میرے والد کے اعصاب پر دباؤ ڈالنا ہے، منصوبے بنانے والوں کو کہنا چاہتی ہوں یاد رکھیں میں نواز شریف کی کمزوری نہیں طاقت ہوں اور ہر آزمائش اور امتحان میں اپنے والد کے ساتھ کھڑی ہوں'۔۔مریم نواز نے کہا کہ نوازشریف کا گناہ یہ ہے کہ وہ پہلی مرتبہ ڈکٹیٹر کو قانون کے کٹہرے میں لائے، کراچی کی روشنیاں بحال کیں، 70 سال بعد فاٹا کو قومی دھارے میں شامل کیا اور دہشت گردی کا خاتمہ کیا۔

(جاری ہے)

مریم نواز کا کہنا تھا کہ وہ ہر سزا بھگتنے کے لیے تیار ہیں اور ایمان ہے سب سے بڑی عدالت اللہ کی عدالت ہے اور وہ اپنے والد کا سر جھکنے دیں گی اور نہ غیرت مند پاکستانیوں کا۔۔مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف کے بہت سے جرائم ہوں گے، بہت سے گناہ ہوں گے مگر انہوں نے پاکستان کے دفاع کو ناقابل تسخیر بنایا، جدید ترین انفراسٹرکچر دیا اور ملک میں جدید شاہراہوں اور موٹرویز کا جال بچھایا۔

مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف نے بلوچستان کو بدامنی سے نکال کر امن وسکون دیا، کراچی کی رونقیں بحال کیں، دیوالیہ ہو جانے والی معیشت کو بحال کیا، نوجوانوں اور بے روزگاروں کے لیے روزگار کے مواقع کھولے اور 19 سال بعد ملک میں مردم شماری کرائی۔۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے 70سال بعد فاٹا کو قومی دھارے میں شامل کیا، وطن کے اندھیرے دور کیے، بجلی پیداوار میں 10 ہزار میگاواٹ کا اضافہ کیا، دہشت گردی کا خاتمہ کیا اور سی پیک کی شکل میں پاکستان کو اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری دی۔