Live Updates

محبوبہ مفتی کی اپنی پارٹی کے دو ارکان کو راجیہ سبھا کی رکنیت سے فوری مستعفی ہونے کی ہدایت

جمعرات اگست 13:16

محبوبہ مفتی کی اپنی پارٹی کے دو ارکان کو راجیہ سبھا کی رکنیت سے فوری ..
نئی دہلی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 08 اگست2019ء) مقبوضہ کشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ اور بھارتی حکمران جماعت بی جے پی کی اتحادی جماعت پی ڈی پی کی سربراہ محبوبہ مفتی کے اپنی جماعت سے تعلق رکھنے والے راجیہ سبھا کے دو ارکان کو ہدایت کی ہے کہ وہ بھارتی پارلیمنٹ کی رکنیت سے فوری استعفیٰ دیں بصورت دیگر انہیں پارٹی سے نکال دیا جائے گا۔

واضح رہے کہ محبوبہ مفتی کی جماعت پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) نے مقبوضہ کشمیر کے نام نہاد انتخابات کے بعد بھارتی حکمران جماعت بی جے پی کے ساتھ مل کر مقبوضہ کشمیر میں حکومت بنائی تھی تاہم جون 2018ء میں بی جے پی کی طرف سے حمایت واپس لینے پر ان کی حکومت ختم ہو گئی تھی۔ بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کی دیگر کشمیری رہنمائوں کی طرح محبوبہ مفتی کو بھی ان کے گھر میں نظر بند کر دیا گیا تھا جن کو اب ان کے گھر سے ایک ریسٹ ہائوس میں منتقل کیا گیا ہے تاہم وہ بدستور زیر حراست ہیں۔

(جاری ہے)

بھارتی اخبار نے بتایا ہے کہ گھر سے ریسٹ ہائوس منتقلی کے دوران انہوں نے اپنے ایک ساتھی کو ہدایت کی کہ ان کی پارٹی سے تعلق رکھنے والے راجیہ سبھا کے ارکان میر فیاض اور نذیر احمد لاوے کو ان کا پیغام پہنچایا جائے کہ وہ فوری طور پر راجیہ سبھا کی رکنیت سے استعفی دے دیں بصورت دیگر ان کو پارٹی سے نکال دیا جائے گا۔رپورٹ کے مطابق میر فیاض نے کہا کہ وہ راجیہ سبھا کی رکنیت سے مستعفی ہونے پر غور کر رہے ہیں اور اس بارے کوئی فیصلہ کرنے کے لئے پارٹی قیادت سے رابطہ کرنا چاہتے ہیں لیکن مقبوضہ کشمیر میں مواصلات کے ذرائع پر پابندی کے باعث ان کا اپنی پارٹ کی قیادت سے رابطہ نہیں ہو پا رہا۔

واضح رہے کہ بھارت نواز جماعت پی ڈی پی کے راجیہ سبھا میں دونوں ارکان نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کا بل پیش ہونے پر بھارتی آئین کی کاپیاں پھاڑ پھینکی تھیں۔
مقبوضہ کشمیر کی خودمختاری ختم سے متعلق تازہ ترین معلومات