سندھ حکومت کا سخت لاک ڈاون نافذ نہ کرنے کا فیصلہ

عید الاضحیٰ کی آمد پر بازار کھلے رہیں گے، بازاروں کے اوقات کار میں مزید اضافہ کر دیا گیا، عوام سے ایس او پیز پر عمل کرنے کی اپیل

muhammad ali محمد علی جمعرات جولائی 00:30

سندھ حکومت کا سخت لاک ڈاون نافذ نہ کرنے کا فیصلہ
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 جولائی2020ء) سندھ حکومت کا سخت لاک ڈاون نافذ نہ کرنے کا فیصلہ، عید الاضحیٰ کی آمد پر بازار کھلے رہیں گے، بازاروں کے اوقات کار میں مزید اضافہ کر دیا گیا، عوام سے ایس او پیز پر عمل کرنے کی اپیل۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کی جانب سے 2 روز قبل اچانک صوبے بھر میں لاک ڈاون نافذ کرنے کا اعلان کیا گیا تھا۔

پنجاب حکومت کے فیصلے کے تحت منگل کے روز سے صوبے کے تمام بازار اور شاپنگ مالز بند کر دیے گئے، صرف چند کاروبار کھلے رکھنے کی اجازت دی گئی۔ پنجاب حکومت نے موقف اپنایا کہ کرونا وائرس پھیلاو کے خدشے کے باعث لاک ڈاون نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ خدشہ ہے کہ عید الاضحیٰ پر احتیاط نہ کی گئی تو عید کے بعد کرونا وائرس کی دوسری لہر آ سکتی ہے۔

(جاری ہے)

اس تمام صورتحال میں سندھ حکومت کی جانب سے بھی دیکھا جا رہا تھا کہ آیا صوبہ سندھ میں لاک ڈاون نافذ کیا جائے گا یا نہیں۔ اس حوالے سے پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت نے اعلان کیا ہے کہ عید الاضحیٰ کی آمد پر صوبے میں لاک ڈاون نافذ نہیں کیا جائے گا۔ صوبے کے بازار کھلے رہیں گے۔ بازاروں کو بند کرنے کی بجائے ان کے اوقات کار میں اضافہ کر دیا گیا ہے۔

مویشی منڈیوں کو بھی دیر رات تک کھلے رہنے کی اجازت ہے۔ صوبائی حکومت نے کہا ہے کہ صوبے میں کوئی مزید سخت پابندی عائد نہیں کی جائے گی۔ جو پابندیاں پہلے عائد کی گئی تھیں، وہ اب بھی برقرار ہیں۔ لوگوں سے اپیل ہے کہ کرونا وائرس کے پھیلاو کو روکنے کیلئے جاری کردہ ایس او پیز پر عمل کیا جائے ۔ یہاں یہ واضح رہے کہ سندھ ملک میں کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا صوبہ ہے، جہاں کرونا کیسز کی تعداد ایک لاکھ سے زائد ہے اور اموات 2 ہزار سے زائد ہیں۔