اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس میں نوازشریف کا بیانیہ اینٹی پاکستان تھا،

اپوزیشن بیان بازی تک محدود رہے گی ، لانگ مارچ نہیں کرے گی، سید صمصام علی بخاری

بدھ ستمبر 17:14

اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس میں نوازشریف کا بیانیہ اینٹی پاکستان ..
لاہور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 23 ستمبر2020ء) صوبائی وزیر وائلڈ لائف وفشریز پنجاب سید صمصام علی بخاری نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس میں نوازشریف کا بیانیہ اینٹی پاکستان تھا، اپوزیشن بیان بازی تک محدود رہے گی اور لانگ مارچ نہیں کرے گی۔

(جاری ہے)

بدھ کے روزجاری اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس میں نوازشریف کا بیانیہ اینٹی پاکستان تھاجبکہ اے پی سی کے انعقاد کی ٹائمنگ خطے کے بدلتے حالات کے تناظر میں بہت غلط تھی، جس وقت پاکستان سی پیک کے ذریعے سنٹرل ایشاء سے ملنے جارہا ہے ، بھارت اور چین کی افواج بارڈز پر آمنے سامنے ہیں۔

ان حالات میں نوازشریف کا اینٹی پاکستان بیانیہ ایک گھنائونی سازش ہے۔صوبائی وزیر نے کہا ہے کہ نواز شریف اور مولانا فضل الرحمن کا ایجنڈا بھارتی ایجنڈا نظر آرہاتھااور اپوزیشن کی اے پی سی فارن فنڈز تھی۔ سید صمصام علی بخاری نے کہا کہ اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس میں پاکستان اور ملکی مفادات کو کاری ضرب لگانے کی کوشش کی گئی لیکن حکومت وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں اپنے احتساب کے بیانیہ سے کبھی پیچھے نہیں ہٹے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ کہ اپوزیشن بیان بازی تک محدود رہے گی اور لانگ مارچ نہیں کرے گی۔