آرمینیا سے جنگ، آذربائیجان میں پاکستانی جھنڈوں کی طلب میں اضافہ

آرمینیا کے خلاف جنگ میں پاکستان نے اپنا وزن آذربائیجان کے پلڑے میں ڈال کر آذری قوم کے دل جیت لیے ہیں اور اب وہاں پاکستانی پرچموں کی طلب بھی بڑھ گئی ہے، آذری سفیر کی ٹوئٹ

Shehryar Abbasi شہریار عباسی پیر اکتوبر 20:38

آرمینیا سے جنگ، آذربائیجان میں پاکستانی جھنڈوں کی طلب میں اضافہ
باکو(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔19 اکتوبر2020ء) آذربائیجان اور آرمینیا کے درمیان جاری جنگ کے بعد آذربائیجان میں پاکستانی جھنڈوں کی ڈیمانڈ بڑھ گئی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق آرمینیا کے خلاف جنگ میں پاکستان نے اپنا وزن آذربائیجان کے پلڑے میں ڈال کر آذری قوم کے دل جیت لیے ہیں اور اب وہاں پاکستانی پرچموں کی طلب بھی بڑھ گئی ہے ۔ بین الاقوامی ذرائع کے مطابق آذربائیجان اور آرمینیا کے درمیان ناگورنو کاراباخ کے تنازع پر جنگ کئی ہفتوں سے جاری ہے اور عارضی جنگ بندی کے باوجود آرمینیا کی جانب سے شہری آبادی کو نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔

پاکستان اور ترکی نے آرمینیا سے جنگ کے معاملے پر آذربائیجان کی پہلے دن سے حمایت کر رکھی ہے جس کے باعث دونوں ملکوں سے اظہار یکجہتی کیلئے باکو کے گھروں کی بالکونیوں میں دونوں ممالک کے پرچم لہرائے گئے تھے ۔

(جاری ہے)

پاکستان کی حمایت کے بعد آذربائیجان میں پاکستانی جھنڈوں کی طلب میں بھی اضافہ ہوگیا ہے جس کی تصدیق پاکستان میں تعینات آذری سفیر علی علی زادہ نے بھی کی ہے ۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شیئر کی گئی ایک ٹوئٹ میں آذری سفیر کا کہنا تھا کہ آذربائیجان میں لوگ ترکی اور پاکستان سے بے حد محبت کرتے ہیں اور اسی وجہ سے پاکستانی جھنڈوں کی طلب بڑھ گئی ہے ۔
خیال رہے کہ عالمی سطح پر ’نگورنو کارا باخ‘ آذربائیجان کا تسلیم شدہ علاقہ ہے تاہم اس پر آرمینیا کے قبائلی گروہ نے فوج کے ذریعے قبضہ کررکھا ہے جب کہ اسی قبضے کے باعث پاکستان آرمینیا کو تسلیم نہ کرنے والا واحد ملک ہے ۔ دوسری جانب آرمینیا سے جنگ میں آذربائیجان کا پلڑا بھاری ہے اور اب تک ناگورنو کاراباخ کے متعدد علاقوں سے قبضہ چھڑا لیا ہے ۔

متعلقہ عنوان :