پی ٹی آئی کو امریکہ میں فنڈ دینے والا اسرائیلی نہیں بلکہ امریکہ میں مقیم پاکستانی آصف چودھری ہے

فنڈ دینے والے شخص نے ویڈیو پیغام میں پوری ن لیگ کو ثبوت دینے کا چیلنج کر دیا

Sajjad Qadir سجاد قادر جمعرات جنوری 05:19

پی ٹی آئی کو امریکہ میں فنڈ دینے والا اسرائیلی نہیں بلکہ امریکہ میں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جنوری2021ء) آج کل فارن فنڈنگ کا کیس پاکستان میں ہاٹ برننگ ایشو بنا ہوا ہے۔جب سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ پی ٹی آئی کو بھی فارن فنڈنگ ہوئی ہے تو اس حوالے سے اپوزیشن تگڑی دکھائی دیتی اور حکومتی جماعتی بھیگی بلی بنی دکھائی دیتی ہے تاہم پھر بھی حکومت اپنی پارٹی کا دفاع کرنے کی بھرپور کوشش کرتی نظر آ رہی ہے۔

پچھلے دنوں راولپنڈی کی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کی راہنما مریم نواز نے پی ٹی آئی کو فنڈنگ کرنے والے دو اشخاص کے نام لیے جن میں سے ایک سے متعلق دعویٰ کیا گیا کہ وہ اسرائیل سے ہے جبکہ دوسرے کا تعلق بھارت کی جمعات بی جے پی سے شو کیا گیا۔جبکہ ان دونوں لوگوں کی فنڈنگ سے متعلق ایک شخص کی کی ویڈیو منظر عام پر آئی ہے جس نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ میں پاکستانی نژاد امریکی ہوں اور پی ٹی آئی کو یہ فنڈ میں نے دیے تھے اور یہ 2012کی بات ہے۔

(جاری ہے)

اس شخص نے ویڈیو میں دکھایا کہ ایک چیک 200ڈالر کا جبکہ ایک چیک 750ڈالر کا تھا جبکہ اسے پاکستان میں کئی بلین ڈالر شو کر دیا گیا۔ویڈیو والے شخص نے دعویٰ کیا کہ یہ چیک آصف چودھری کی طرف سے دیے گئے ہیں جس کا نام بھی چیک پر موجود ہے اور یہ امداد نہ صرف آصف چودھری بلکہ امریکہ میں رہنے والے اور لوگوں کی طرف سے بھی دی گئی تھی۔اور اس امدادی چیک کو اسرائیلی شخص کے ساتھ منسوب کرنا زیادتی ہے کیونکہ اس کا اس چیک سے کوئی بھی لینا دینا نہیں ہے۔

اس شخص نے ن لیگ کی پوری قیادت کو للکارتے ہوئے کہا کہ یہاں آئیں اوریہاں آ کر ہم پر کیس دائر کریں اگر آپ کی نظر میں یہ ممنوعہ فنڈنگ ہے۔وگرنہ ا س طرح سے بے پر کی اڑانا بند کر دیجیے۔دیکھتے ہیں کہ اس شخص کے ویڈیو چیلنج اور چیک ثبوت دینے کے بعد ن لیگ کی طرف سے کیا موقف سامنے آتا ہے۔