صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے تعلیمی ادارے دوبارہ بند ہونے کا امکان مسترد کر دیا

ہماری کوشش ہے کہ تعلیمی ادارے اب بند نہ ہوں ۔ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین منگل فروری 13:58

صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے تعلیمی ادارے دوبارہ بند ہونے کا ..
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 23 فروری 2021ء) : صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے کورونا کے پیش نظر تعلیمی ادارے دوبارہ بند ہونے کا امکان مسترد کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق ڈاکٹر یاسمین راشد نےسیف کیمپس پروگرام کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وبا میں تبدیلی آرہی ہے، پنجاب میں کورونا وبا کہیں نہیں گئی آج بھی موجود ہے۔ انہوں نے ویکسین کی دستیابی سے متعلق بتاتے ہوئے کہا کہ رواں سال کے وسط تک عوام کو کورونا ویکسن مل جائے گی، ہماری کوشش ہے کہ تعلیمی ادارے اب بند نہ ہوں۔

ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی وبا سے پتہ چلا ہمارے پاس ٹیسٹ کی سہولیات ناکافی ہیں، 22 سے 23 ہزار ٹیسٹ روزانہ ہوسکتے ہیں۔ ہم نے کوروناوائرس کے ٹیسٹ لینے کے لیے 4 نئی لیبارٹریاں بنانے کا فیصلہ کیا کر لیا ہے جس سے شہریوں کو مزید سہولت ہو گی۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ تعلیمی ادارے بند کرنے سے متعلق اپنے ایک بیان میں اگر بچے تعلیمی اداروں میں خوش نہ ہوتے تو میں مزید چھٹیاں دے دیتا۔

انہوں نے کہا تھا کہ کورونا کے دور میں تعلیمی ادارے بند کرنا مشکل فیصلہ تھا۔تعلیم سے بہت سے چینلجز کا سامنا تھا۔سیاسی ٹویٹر کرتا ہوں تو کہا جاتا ہے کہ تعلیم پر ٹویٹ کریں۔ خیال رہے کہ عالمی وبا کورونا کے وار تاحال جاری ہیں۔ پاکستان بھر میں آج بھی کورونا کے مزید 41 مریض جاں بحق اور ایک ہزار 50 کیسز سامنے آئے ، جس کے بعد اموات کی تعداد 12ہزار 600 سے تجاوز کرگئی ہے۔ ملک بھر میں کورونا کےفعال کیسزکی تعداد24ہزار483 جبکہ متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 5 لاکھ 73 ہزار 384 ہو گئی ہے۔ دوسری جانب پاکستان میں کورونا کی ویکسینیشن کا عمل جاری ہے ، پہلے مرحلے میں ہیلتھ ورکرز کو ویکسین لگائی جا رہی ہے جبکہ بزرگ شہریوں کی کورونا ویکسی نیشن مارچ کے پہلے ہفتے میں شروع کی جائے گی۔