پی ٹی آئی کے تین اہم ترین اراکین کا جہانگیر ترین کے خلاف سازش رچانے کا انکشاف

وزیراعظم عمران خان نے جہانگیر ترین کے خلاف مقدمہ نہیں کروایا، لندن کے ہملٹن ہوٹل میں پی ٹی ئی کے تین اہم ترین اراکین جہانگیر ترین کے خلاف سازش میں ملوث ہیں، سینئر صحافی عارف حمید بھٹی

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری جمعرات اپریل 21:00

پی ٹی آئی کے تین اہم ترین اراکین کا جہانگیر ترین کے خلاف سازش رچانے ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ، تازہ ترین اخبار، 8اپریل 2021) نجی ٹیلی ویژن چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے دعویٰ کیا ہے کہ جہانگیر ترین کے خلاف مقدمہ وزیراعظم عمران خان نے نہیں کروایا۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے انکشاف کیا کہ جہانگیر ترین ترین کے خلاف مقدمے کی سازش لندن کے ہملٹن ہوٹل میں تحریک انصاف کے تین اہم ترین اراکین نے رچائی۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان اور جہانگیر ترین کے درمیان دوریاں بڑھانے کے لیے پی ٹی آئی کے اپنے اراکین ملوث ہیں۔ واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے شوگر سٹہ مافیا کے خلاف کریک ڈاؤن کا حکم دیا ہے، جس کے بعد ایف آئی اے نے سٹہ مافیا میں ملوث دیگر عناصر کے ساتھ ساتھ پی ٹی آئی کے اہم کارکن سمجھے جانے والے جہانگیر ترین کے خلاف بھی مقدمہ درج کر لیا ہے۔

(جاری ہے)

اپوزیشن نے الزام عائد کیا کہ جہانگیر ترین کے خلاف مقدمہ عمران خان نے عائد کیا۔ یہ بھی کہا گیا کہ جہانگیر ترین تحریک انصاف چھوڑ رہے ہیں۔ تاہم جہانگیر ترین نے اپنا رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی رہنما کہتے ہیں کہ پیپلزپارٹی کے رہنماء سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے سابق گورنر پنجاب مخدوم احمد محمود کا جہاز استعمال کیا ، جن کا اپنا الگ جہاز ہے ، حکومت کو میرے جہاز کے بارے میں غلط رپورٹ دی گئی ، یوسف رضا گیلانی نے مخدوم احمد محمود کا جہاز استعمال کیا تو اس میں میرا کیا قصور ہے؟ میرا دامن صاف ہے وزیر اعظم کو نقصان پہنچانے کا تصور ہی نہیں کرسکتا۔

علاوہ ازیں پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما جہانگیر ترین کے سیاسی ناشتے کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی ، میڈیا رپورٹس کے مطابق جہانگیر ترین نے ناشتے میں خوب دل کی بھڑاس نکالی اور اپنے خلاف ہونے والی انتقامی کاروائی کا خلاصہ بیان کرتے ہوئے کہا کہ میرے خلاف سازش میں وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اعظم خان شامل ہیں ، اعظم خان اور شہزاد اکبرنے مجھے گرفتار کروانے کا منصوبہ بنایا ۔

انہوں نے کہا کہ میں نے بیوروکریسی کو فعال بنانے کے لئے سٹریٹجک ریسورس یونٹ بنانے کی تجویز دی تھی ، اعظم خان نے میری تجویز کو اپنے خلاف سازش سمجھ لیا اور کہا کہ بیوروکریسی کو کنٹرول کرنے کا متبادل نظام نہیں بننے دیں گے ،اعظم خان سمجھتے ہیں کہ اصلاحاتی نظام آ گیا تو ان کے اختیارات کم ہو جائیں گے ، پی ٹی آئی میں پانچ رکنی ٹولے نے عمران خان کو مجھ سے دور کیا ، واٹس ایپ پر وزیراعظم کو مثبت تجاویز بھجواتا رہا ،عمران خان کو سازش کے تحت تنہا کیا جا رہا ہے ، ان کے ساتھ وفاداری کی لیکن میرے متعلق عمران خان کو گمراہ کیا گیا۔