Live Updates

امریکہ کا افغان مترجموں کو ورجینیا کے فوجی اڈے پر پناہ دینے کا فیصلہ

مترجموں اور ان کے اہل خانہ سمیت2500 افغانوں کو پناہ دی جائے گی،ترجمان

منگل جولائی 16:43

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 جولائی2021ء) امریکا نے فیصلہ کیا ہے کہ افغانستان میں افواج کے ساتھ مترجم کا کام کرنے والے افغانیوں کو ورجینیا کے فوجی اڈے پر پناہ دی جائیگی۔ترجمان امریکی وزارت خارجہ نیڈ پرائس نے بتایا کہ مترجموں اور ان کے اہل خانہ سمیت2500 افغانوں کو پناہ دی جائے گی۔امریکی حکام نے بتایاکہ جن مترجموں اور ان کے اہل خانہ کی جانچ پڑتال مکمل ہوگئی ہے انہیں پناہ ملے گی،تمام اہل افراد کو آئندہ 10 روز میں منتقل کیا جائے گا۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا تھا کہ جنہوں نے افغان جنگ میں امریکا کی مدد کی انہیں تنہا نہیں چھوڑیں گے۔جو بائیڈن کا کم از کم 18،000 افغان شہریوں اور ان کے اہل خانہ کو امریکہ میں تارکین وطن کے طور پر قبول کرنے کا کہا تھا جو گذشتہ دو دہائیوں سے امریکی فوج میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔

(جاری ہے)

کہا جارہا ہے کہ ان مترجموں کو امریکی فوجوں کے انخلا کے بعد طالبان سے انتقامی کارروائیوں کا خطرہ ہے۔

محکمہ خارجہ کی ترجمان نیڈ پرائس نے پیر (19 جولائی) کو واشنگٹن میں ایک نیوز کانفرنس میں تصدیق کی ہے کہ پہلے مرحلے میں ، تقریبا25سو افغانی مترجم اور ان کے کنبے کو قلیل مدتی رہائش کے لئے امریکہ منتقل کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ جب افغانی امیگریشن کے خصوصی عمل کے آخری مراحل کو مکمل کرتے ہیں تو ، انہیں عارضی رہائش فراہم کی جائے گی۔
افغانستان کی بگڑتی صورتحال سے متعلق تازہ ترین معلومات