Kajoo Ka Dodh Bhi Peye - Article No. 1199

کاجو کا دودھ بھی پییں - تحریر نمبر 1199

ہفتہ 16 دسمبر 2017

Kajoo Ka Dodh Bhi Peye - Article No. 1199
صباگل حسن:
کاجو کا دودھ کریم کی شکل میں ہوتا ہے ۔یہ ذائقے داربھی ہے، اس لیے سب اسے پینا پسند کرتے ہیں ۔ یہ رفتہ رفتہ ان افراد میں مقبول ہورہا ہے ، جنھیں عام دودھ ہضم نہیں ہوتا یا جو دودھ پی کر اپنا وزن نہیں بڑھانا چاہتے۔ کاجو کے دودھ میں درج ذیل غذائی اجزا شامل ہوتے ہیں، جو صحت کے لئے فائدہ مند ہیں۔
تانبا:یہ جادوئی معدن(منرل)مانع تکسید اجزا میں اضافہ کردیتا ہے، اس لیے آزاد اصلیے دور بھاگتے ہیں ۔

یہ آزاد اصلیے کئی بیماریوں کا سبب بنتے ہیں۔ اس کے علاوہ اس میں میلانن کی اچھی مقدار ہوتی ہے۔ یہ کیمیائی جزو آپ کی جِلد اور بالوں کو چمک دیتا ہے، جس سے آپ کی شخصیت جاذب نظر ہوجاتی ہے۔ تانبے سے ہڈیاں اور بافتیں مضبوط رہتی ہیں۔

(جاری ہے)


غیرسیر شدہ چکنائی: کاجو کے دودھ میں پائی جانے والی چکنائی کو ”اچھی چکنائی“ کہاجاتا ہے، لہٰذا یہ ذیابیطس اور دل کے مریضوں کے لیے مفید ہے۔

یہ پیٹ کی چکنائی اور کولیسٹرول کو کم کرتا ہے۔ چناں چہ اسے پینے سے دل کی بیماریاں کم ہوجاتی ہیں اور فالج ہونے کے امکانات دور ہوجاتے ہیں۔ ماہرین کہتے ہیں کہ جوڑوں کے پتھرانے کے سبب جسم میں جو جلن ہوتی ہے اور ورم ہوجاتا ہے، اسے کاجو سے کم کیا جاسکتا ہے۔
میگنیزیئم: کاجو کے دودھ میں میگنیزیئم کی بڑی مقدار پائی جاتی ہے۔

اگر آپ کے جسم میں میگنیزیئم کی مقدار کم ہے تو آپ کو ہائی بلڈ پریشر ہوسکتا ہے۔ آدھے سرکا درد ہونے کا بھی خطرہ ہوتا ہے۔ آپ پر گہری تھکن طاری ہوجاتی ہے اور جسم میں کھچاؤ پیدا ہوجاتا ہے۔
میگینیز: میگینیز صحت کے لیے بے حد ضروری ہے۔ اسے کھانے سے ہڈیوں کا ڈھانچہ مضبوط ہوتا ہے۔ میگینیز ایسے خامرے(انزائمز) پیدا کرتا ہے ، جس سے ہڈیاں مضبوط ہوتی ہیں، اس کے علاوہ یہ نظام ہضم وجذب کو درست رکھتا ہے، جو صحت کے لیے ضرور ہے۔


فاسفورس: یہ ہماری صحت کے لیے بے حد اہمیت کا حامل ہے۔ نظام ہضم کو بہتر بناتا ہے۔ دماغ کے لیے مفید ہے۔ اسے فعال رکھتااور تھکن کو کم کرتا ہے۔ جسم کے ہارمونوں میں توازن پیدا کرتا ہے۔100 گرام کاجو میں درج ذیل صحت بخش اجزاء ہوتے ہیں: سیر شدہ چکنائی 7-8 گرام ،غذائی ریشہ 3-3 گرام،شکر 5-9 گرام،پروٹین17-2 گرام،تانبا 2-2 ملی گرام،میگنیزیئم 292 ملی گرام،مینگینز1-7 ملی گرام،فاسفورس 593 ملی گرام یا بات یادرکھیے کہ کاجو کا دودھ عام دودھ کے مقابلے میں مہنگا ملتا ہے۔

اگر آپ اسے گھر میں تیار کریں گے تو سستا پڑے گا۔ دودھ بنانے کا طریقہ نہایت آسان ہے۔ ایک پیالی کاجو لیجئے، انھیں پانی میں ڈال دیجیے تاکہ یہ نرم ہوجائیں۔ بارہ گھنٹوں کے بعد ان میں مزید تین پیالی پانی ڈال کر گرائنڈ رکرلیجئے۔ جب یہ محسوس کریں کہ کاجو اچھی طرح پس گئے ہیں تو انھیں گرائنڈر سے نکال لیجئے اور نوش جاں کیجئے۔
تاریخ اشاعت: 2017-12-16

Your Thoughts and Comments