بند کریں
صحت مضامینمضامینہیپاٹائٹس Cکی نئی دوا تیار

مزید مضامین

پچھلے مضامین - مزید مضامین
ہیپاٹائٹس Cکی نئی دوا تیار
عالمی ادارہ صحت کے جاری کردہ اعامیے کے مطابق ہیپاٹائٹس کی نئی دواؤں سے اب تک پسماندہ اور غریب ممالک میں دس لاکھ سے زیادہ مریضوں کا کامیاب علاج کیا جاچکا ہے۔ 2013میں مریضوں پر استعمال کیلئے منظور کی جانے والی یہ دوائیں براہ راست ہیپاٹائٹس سی وائرس کو نشانہ بناتی ہیں اورجگر کو متاثر کرنے والی اس خطرناک اور جان لیوا بیماری کاخاتمہ کرتی ہیں۔
عالمی ادارہ صحت کے جاری کردہ اعامیے کے مطابق ہیپاٹائٹس کی نئی دواؤں سے اب تک پسماندہ اور غریب ممالک میں دس لاکھ سے زیادہ مریضوں کا کامیاب علاج کیا جاچکا ہے۔ 2013میں مریضوں پر استعمال کیلئے منظور کی جانے والی یہ دوائیں براہ راست ہیپاٹائٹس سی وائرس کو نشانہ بناتی ہیں اورجگر کو متاثر کرنے والی اس خطرناک اور جان لیوا بیماری کاخاتمہ کرتی ہیں۔ ان دواؤں سے ہیپاٹائٹس ’سی ‘ کے 95فیصد سے بھی زیادہ مریض صحت یاب ہوجاتے ہیں جو ان کا سب سے مثبت پہلو ہے جبکہ ہیپاٹائٹس کی دوسری دواؤں کے برعکس اُن کے ضمنی اثرات بھی بہت کم ہیں۔ مگر یہ دوائیں بہت مہنگی بھی ہیں جس کی وجہ سے یہ خدشہ تھا کہ غریب اور کم تروسائل رکھنے والی ترقی پذیر ممالک ان سے کوئی فائدہ نہیں اٹھا سکیں گے ، حالانکہ دنیا بھر میں ہیپاٹائٹس ’سی‘ کے 8کروڑ سے زیادہ مریضوں کی بڑی تعداد غریب اور ترقی پذیر ممالک میں رہتی ہے۔ اس کے پیش نظر عالمی ادارہ صحت کے تعاون سے 2014ایک بین الااقومی منصوبہ شروع کیاگیا جس کے تحت لائسنس اور فروخت کی مختلف تدابیر اختیار کرتے ہوئے غریب ممالک میں ان دواؤں کی کم قیمت پر فراہمی ممکن بنائی گئی تاکہ وہاں رہنے والے لوگ بھی اس نئے علاج سے مستفید ہوسکیں۔ اس وسیع البنیاد پروگرام میں اوسط اور کم آمدنی والے کئی ممالک شریک کئے گئے جن میں ارجنٹینا، برازیل، مصر، جارجیا، انڈدونیشیاء مراکش ، نائجیریا، پاکستان، فلپائن ، رومانیہ روانڈا، تھائی لینڈ اور یوکرائن شامل ہیں۔
عالمی ادارہ صحت نے اپنے تازہ اعلان میں اس منصوبے سے اب تک حاصل کی گئی کامیابیوں پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ ہیپاٹائٹس کی مذکورہ نئی دواؤں سے علاج کی ابتدائی لاگت 85000ڈالر فی کس تھی جسے اس منصوبے کی مدد سے کم کرکے 1000ڈالر فی کس سے بھی کم کردیاگیا ہے ۔ اس سلسلے میں مصر کی کارکردگی سب سے اچھی رہی جہاں اس وقت نئی دواؤں سے ہیپاٹائٹس ’سی ‘ کے مکمل سہ ماہی علاج کی لاگت 200ڈالر فی کس رہ گئی ہے۔ ان کامیابیوں کے باوجود عالمی ادارہ صحت نے اعتراف بھی کیا ہے کہ یہ دوائیں اب بھی ہیپاٹائٹس سی کے 80فیصد سے زائد مریضوں کی پہنچ سے دور ہیں، جس کیلئے بہت زیادہ کام کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اس بیماری سے ابھی بھی ہرسال تقریباََ لاکھ افراد مر جاتے ہیں جبکہ زندہ بچ جانے والوں کومالی طور پر شدید ترین دباؤ میں لے آتی ہے ۔

(2) ووٹ وصول ہوئے