بند کریں
صحت صحت کی خبریںموبائل فون اور کمپیوٹر جیسے جدید آلات کا استعمال کمسن بچوں کی ذہنی نشو ونما کی رفتار سست کرسکتا ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 10/12/2015 - 12:18:54 وقت اشاعت: 08/12/2015 - 17:07:38 وقت اشاعت: 08/12/2015 - 15:29:52 وقت اشاعت: 08/12/2015 - 15:01:41 وقت اشاعت: 08/12/2015 - 13:57:56 وقت اشاعت: 08/12/2015 - 13:27:21 وقت اشاعت: 07/12/2015 - 19:10:21 وقت اشاعت: 07/12/2015 - 16:44:40 وقت اشاعت: 07/12/2015 - 16:42:59 وقت اشاعت: 06/12/2015 - 17:19:05 وقت اشاعت: 06/12/2015 - 13:47:36

موبائل فون اور کمپیوٹر جیسے جدید آلات کا استعمال کمسن بچوں کی ذہنی نشو ونما کی رفتار سست کرسکتا ہے،تحقیقی رپورٹ

واشنگٹن۔ 08 دسمبر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین08دسمبر۔2015ء) موبائل فون اور کمپیوٹر جیسے جدید آلات کا استعمال کمسن بچوں کی ذہنی نشو ونما کی رفتار سست کرسکتا ہے۔ امریکی جریدے ریکٹا پیٹریاٹریکا میں شائع ہونے والی تحقیقی رپورٹ کے مطابق کمسن بچوں کی ذہنی نشوونما کے لئے خاندان کے دیگر افراد کے ان سے حقیقی روابط کا کوئی نعم البدل نہیں کیونکہ کمسن بچے سیکھنے کے عمل میں دیکھنے ‘ سننے ‘ سونگھنے ‘ چکھنے اور چھونے کے تمام حواس کو بروے کار لاتے ہیں جو ”سکرین“ کے ذریعے روابط میں ممکن نہیں ماہرین کا کہنا ہے کہ کمسن بچوں کو زبان اور دیگر چیزیں سکھانے کے لئے آئی پیڈ ‘ ڈی وی ڈیز اور ایسے دیگر جدید آلات کا استعمال ان کی ذہنی نشوونما کی رفتار سست کرنے کا باعث بن سکتا ہے۔

08/12/2015 - 13:27:21 :وقت اشاعت