تھرپارکر ،غذائی قلت کے شکار مزید دو بچے دم توڑ گئے

تھرپارکر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آئی این پی۔28 جنوری۔2016ء) تھرپارکر میں بچوں کی ہلاکت کا سلسلہ نہ رک سکا غذائی قلت سے بیمار مزید دو بچے دم توڑ گئے۔

(جاری ہے)

تھرپارکر میں طبی سہولیات کے فقدان اور غذائی قلت کے باعث مزید دو بچے دم توڑ گئے ، مٹھی سول ہسپتال میں عمران کی چار دن کی بچی اور گاوٴں روھیڑو کے رہائشی دلاور کی پانچ روز کی بچی شامل ہیں۔ 28 روز میں جاں بحق بچوں کی تعداد 104 ہو گئی ہے اور گذشتہ روز بھی پانچ بچے دم توڑ گئے تھے اور مٹھی ہسپتال سمیت دیگر ہسپتالوں میں 170 بچے زیر علاج ہیں۔ تھر میں قحط کی صورتحال کے باوجود سندھ حکومت نے تھرپارکر کو قحط زدہ علاقہ قرار نہ دیا ہے اور اس وجہ سے امدادی سرگرمیاں شروع نہ ہوسکی ہیں۔

Your Thoughts and Comments