بند کریں
صحت صحت کی خبریںصفائی ستھرائی کافقدان کراچی کی 40فیصد آبادی جلد ی کے مختلف امراض میں مبتلا ہو گئی
ا نسٹیٹیوٹ ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 19/08/2016 - 13:03:26 وقت اشاعت: 18/08/2016 - 16:33:09 وقت اشاعت: 18/08/2016 - 16:29:30 وقت اشاعت: 18/08/2016 - 13:01:33 وقت اشاعت: 17/08/2016 - 17:45:02 وقت اشاعت: 17/08/2016 - 17:02:48 وقت اشاعت: 17/08/2016 - 16:55:29 وقت اشاعت: 17/08/2016 - 16:47:52 وقت اشاعت: 17/08/2016 - 16:28:06 وقت اشاعت: 17/08/2016 - 16:14:08 وقت اشاعت: 17/08/2016 - 14:15:14

صفائی ستھرائی کافقدان کراچی کی 40فیصد آبادی جلد ی کے مختلف امراض میں مبتلا ہو گئی

ا نسٹیٹیوٹ آف اسکن ڈیزیز(چمڑا) ہسپتال میں روزانہ آنیوالے مر یضوں کی تعداد1500سے بڑھ کر4000 ہو گئی

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 اگست ۔2016ء)شہر قا ئد میں بارشوں کے بعد گندگی وغلاظت اورکچرے کے ڈھیرسے جلدی امر اض کے مریضو ں کی تعد اد میں 2سو فیصد اضا فہ ہو گیا ہے۔ملک کے واحد اور سب سے بڑے انسٹی ٹیوٹ آف اسکن ڈیزیز(چمڑا) اسپتال میں روزانہ آ نے والے جلد ی امر اض میں مبتلا مر یضوں کی تعداد 1500سے بڑھ کر4000 ہو گئی ہے۔کراچی کی تقریباً40فیصد آبادی مختلف جلد ی امراض میں مبتلا ہو گئی ہے۔

بارشوں کے بعد گندگی وغلاظت اورکچرے کے ڈھیروں، غربت ،صفائی ستھرائی کافقدان ،مرض سے بچاوٴ کی آگاہی نہ ہونا سمیت دیگر وجوہ جلدی بیماری کا سبب بن رہی ہے ۔ شہر کے ہر گلی محلوں میں گزشتہ کئی ماہ سے کچرے کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں او ربارشوں کے بعدسے شہر کے مختلف علا قوں میں سیوریج کا پانی صاف پانی میں شامل ہونے سے جلد ی امر اض میں مبتلا مر یضوں کی تعداد میں 2سو فیصد اضا فہ ہو گیا ہے۔

مر یضوں کی تعداد بڑ ھنے کی وجہ سے اسپتا ل آنے والے مر یضوں کے علاج کے لئے ڈاکٹر زاور جگہ کم پڑھ گئی ہے،مر یضوں کو اسپتا ل کے احا طے سے با ہر دھوپ میں لا ئن لگا کر اپنی با ری کا انتظا ر کر نا پڑتا ہے۔یہ بات ملک کے واحد اور سب سے بڑے انسٹی ٹیوٹ آف اسکن ڈیزیز(چمڑا) اسپتال کی ڈائر یکٹر اور سینئرماہر امراض جلد ڈاکٹر نسر ین نے میڈیا کے نمائندوں سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ یہ انسٹی ٹیوٹ پاکستان کا سب سے بڑا انسٹی ٹیوٹ ہے جہاں اس وقت 4 ہزار تک یومیہ جلدی امرا ض میں مبتلا مر یض آ تے ہیں جس میں مرد،خواتین اور بچوں کی تعداد زیادہ ہے اسپتال آ نے والے مر یضو ں کو تمام ادویات ،کریم اور لیبارٹری ٹیسٹ کی سہولتیں مفت فراہم کی جاتی ہیں۔ان کا کہناتھا کہ اسکن انفیکشن میں خارش،گرمی دانے،جسم کے مختلف حصوں پر دانے کا نکلنا،بالوں کا جھڑنا اور دیگر مختلف خارش کی بیماریاں شامل ہیں۔

ڈاکٹرنسر ین نے کہا کہ انسٹی ٹیوٹ اسپتال ایک قدیم اسپتال ہے جہاں افغانستان،خیبر پختون خوہ، بلوچستان، پنجاب سمیت ملک بھر سے مریض رپورٹ ہوتے ہیں اور ایک بار علاج کرانے کے بعد دوسروں کو بھی بتاتے ہیں اور شفا حاصل کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسپتال میں روزانہ کی بنیادوں پر20مختلف او پی ڈیز ہوتی ہیں جہاں مر د و خواتین کی الگ الگ او پی ڈی بھی ہوتی ہیں جبکہ یہ اسپتال 60بستروں پرمشتمل ہے جہاں مریضوں کو داخل کرکے کھانے پینے اور دیگر تمام طبی سہولتیں بھی فراہم کی جاتی ہیں۔

ان کا مزید کہناتھا کہ گرمیوں اور بارشوں کے بعد اسکن ڈیزیز کے مریضوں میں اضافہ ہوجاتاہے جس سے بچنے کے لئے عوام کو چاہئے کہ وہ صا ف ستھرے رہیں اور صاف خوراک کا استعمال کریں جبکہ متاثرہ افراد کو چاہئے کہ وہ اپنے آپ کو دوسروں سے الگ رکھیں تاکہ دیگر افراد اس کی لپیٹ میں نہ آئیں۔ اس دوران لیا قت آبا د کے رہائشی مریض عا سم علی نے بتایا کہ وہ گزشتہ کئی ماہ سے خارش کی بیماری میں مبتلا ہے اور ایک ہفتے قبل اپنا علاج کرانے کی غرض سے اسپتال میں داخل ہے جہاں پر اس کا مفت علاج جاری ہے۔
17/08/2016 - 17:02:48 :وقت اشاعت