آمروں ،سلیکٹڈ ٹولے کی کرپشن ، کمیشن ،ڈیلوں کی سزا قوم بھگت رہی ہے،مریم اورنگزیب

عمران خان ، شہزاد اکبراورحواری براڈ شیٹ سے کمیشن ،کٹ ‘ مانگتے رنگے ہاتھوں پکڑے گئے ہیں، قوم ،دنیا جان چکی سلیکٹڈ حکومت اور نیب کمیشن زدہ ہے ،پہلے آمرتھا اب سلیکٹڈ مسلط ہے، صرف چہرے بدلے ہیںترجمان مسلم لیگ (ن)

پیر جنوری 23:50

آمروں ،سلیکٹڈ ٹولے کی کرپشن ، کمیشن ،ڈیلوں کی سزا قوم بھگت رہی ہے،مریم ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 18 جنوری2021ء) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ آمروں ،سلیکٹڈ ٹولے کی کرپشن ، کمیشن ،ڈیلوں کی سزا قوم بھگت رہی ہے،عمران خان ، شہزاد اکبراورحواری براڈ شیٹ سے کمیشن ،کٹ ‘ مانگتے رنگے ہاتھوں پکڑے گئے ہیں، قوم ،دنیا جان چکی سلیکٹڈ حکومت اور نیب کمیشن زدہ ہے ،پہلے آمرتھا اب سلیکٹڈ مسلط ہے، صرف چہرے بدلے ہیں۔

مشیر احتساب شہزاد اکبر کی پریس کانفرنس پر ردعمل دیتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا کہ ماضی میںآمر نے منتخب وزرا ء اعظم کیخلاف سازش ، مارشل لا ء کوسند جواز دینے اور ان کے خلاف کرپشن کا بیانہ بنانے کیلئے قومی خزانے کو جو نقصان پہنچایا اس کی قیمت پاکستانی قوم ادا کررہی ہے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ آئین پر شب خون مارنے والے آمروں اور سلیکٹڈ ٹولے کی کرپشن ، کمیشن اور ڈیلوں کی سزا قوم بھگت رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ نواز شریف کے خلاف زیرو ریکوری ہوئی ہے، 20سال ہوگئے، 65 ملین ڈالر پہلے ادا کر دیئے لیکن اب تک صفر چوری کا مال برآمد ہوا ۔ انہوں نے کہا کہ برطانوی عدالت کا فیصلہ آنے سے پہلے پاکستانی سفارتخانے کے اکائونٹ میں پیسے کیوں رکھوائے گئے اس کا جواب دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف کے خلاف کرپشن کا جھوٹا بیانیہ گھڑنے اور مارشل لاء کے جواز کیلئے پرویز مشرف نے براڈ شیٹ کمپنی استعمال کی،2000 میں پرویز مشرف نے چھ ماہ پہلے بنائی گئی کمپنی کو 600 کروڑ دے دئیے ،براڈ شیٹ کا ڈرامہ پاکستانی قوم کا کروڑوں روپیہ منی لانڈرنگ کیلئے استعمال کیاگیا ۔

انہوں نے کہا کہ 600 کروڑ ابتدائی اور 440 کروڑ زرتلافی کے ملا کر مجموعی طورپر پاکستان کے ایک ہزار 40 کروڑ لوٹ لئے گئے ۔ انہوں نے کہا کہ آئین پر شب خون مارنے کی سزا مہنگائی، بے روزگاری، جرمانوںاور کرپشن کی صورت میں پاکستانی قوم کو ملتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان ، شہزاد اکبراوران کے حواری براڈ شیٹ سے کمیشن اور’ کٹ ‘ مانگتے رنگے ہاتھوں پکڑے گئے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ’کٹ‘ اور کمیشن کیوں مانگاگیا کس قانونی معاہدے کے تحت ملاقاتیں کی گئیں کس کس نے ملاقات کی بتایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ یہ تو محض ’’ٹپ آف دی آئیس برگ ہے‘‘ابھی تو اور بہت سارے کیس سامنے آنے باقی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو سوال پوچھے تھے، ان کے جواب دیں، بتائیں جس کمپنی نے صفر برآمدگی کی، اسے کروڑوں کیوں دئیے گئی انہوں نے کہا کہ الفاظ کے ہیر پھیر ، حیلے بہانے ، آئیں بائیں شائیں سے کام نہیں چلے گا،آپ کی چوری پکڑی جاچکی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قوم اور دنیا جان چکی ہے کہ سلیکٹڈ حکومت اور نیب کمیشن زدہ ہے جو ڈیلیں کرتے اور کمیشن کھاتے پکڑے گئے ہیں ،پہلے آمرتھا اب سلیکٹڈ مسلط ہے، صرف چہرے بدلے ہیں۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments