اشتعال انگیز تقریرکیس،فاروق ستار سمیت5 ایم کیو ایم رہنما بری

بری ہونے والوں میں ڈاکٹر فاروق ستار، خواجہ اظہار الحسن، رئوف صدیقی، وسیم اختر اورقمر منصورشامل ہیں

پیر نومبر 16:35

اشتعال انگیز تقریرکیس،فاروق ستار سمیت5 ایم کیو ایم رہنما بری
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 30 نومبر2020ء) انسداد دہشت گردی کی عدالت نے اشتعال انگیز تقریرمیں سہولت کاری کیس کا فیصلہ سنا دیا ۔پیرکوانسداددہشت گردی عدالت نی5 ملزمان کی بریت کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے۔ڈاکٹر فاروق ستار، خواجہ اظہار الحسن، رئوف صدیقی، وسیم اختر اورقمر منصور کو بری کر دیا۔ملزمان کے خلاف سہراب گوٹھ تھانے میں دو مقدمات درج تھے۔

سرکاری وکیل کی جانب سے ملزمان کو بری کرنے کی مخالفت کی گئی جس کو عدالت نے رد کر دیا۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ عدالت نی11جنوری2020 کو ایم کیو ایم کے سابق کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار، سینئررہنما عامر خان، وسیم اختر، خواجہ اظہار الحسن اور محمد جاوید پر فرد جرم عائد کی تھی تاہم ملزمان نے صحت جرم سے انکار کردیا تھا۔یاد رہے کہ 22 اگست 2016 کو ایم کیو ایم کے بانی الطاف حسین کی جانب سے پاکستان مخالف تقریر اور میڈیا ہائوس پر حملوں میں سہولت کاری پر ڈاکٹرفاروق ستار، ڈاکٹرخالد مقبول صدیقی اورڈاکٹر عامر لیاقت حسین سمیت دیگر پر کراچی کے مختلف تھانوں میں مقدمات درج کیے گئے تھے۔ عدالت نے متعدد رہنمائوں کے وارنٹ گرفتاری بھی جاری کیے تھے۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments