سندھ ہائی کورٹ ، دو پولیس اہلکاروں کے قتل میں سزا یافتہ ملزم کی اپیل منظور، انسداد دہشتگردی کی عدالت کا فیصلہ کالعدم قرار

منگل 18 جنوری 2022 14:15

سندھ ہائی کورٹ ، دو پولیس اہلکاروں کے قتل میں سزا یافتہ ملزم کی اپیل منظور، انسداد دہشتگردی کی عدالت کا فیصلہ کالعدم قرار
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 18 جنوری2022ء) سندھ ہائی کورٹ نے دو پولیس اہلکاروں کے قتل میں سزا یافتہ ملزم کی اپیل منظور کرتے ہوئے انسداد دہشتگردی کی عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیدیا۔ منگل کوجسٹس کے کے آغا کی سربراہی میں بینچ نے دو پولیس اہلکاروں کے قتل میں سزایافتہ ملزم کی اپیل پر فیصلہ سنادیا۔ عدالت نے ملزم اعجاز شاہ کی سزا کے خلاف اپیل منظور کرلی۔

عدالت نے اے ٹی سی کورٹ کی جانب سے دی گئی سزا کو کالعدم قرار دے دیا۔ عدالت نے فیصلے میں کہا کہ اگر ملزم کسی اور کیس میں مطلوب نہیں نہیں ہے تو رہا کیا جائے۔ ایف آئی آر میں کہا گیا کہ ملزم کا تعلق لیاری گینگ وار سے بتایا گیا لیکن ایسا کوئی ثبوت پیش نہیں کیا گیا۔ ملزم کی جانب سے پولیس حراست میں دئیے گئے اعترافی بیان کی قانونی حیثیت نہیں ہے۔

(جاری ہے)

سرکاری وکیل نے موقف دیا تھا کہ ملزم پر اے ایس آئی عارف اور ہیڈ کانسٹیبل ندیم کو قتل کرنے کا الزام تھا۔ ملزم کو انسداد دہشت گردی عدالت نے اکتوبر 2018 میں دو مرتبہ عمر قید کی سزا سنائی تھی۔ یکم مئی 2006 میں ملزمان نے پنجاب کالونی کے قریب پولیس موبائل پر فائرنگ کی تھی۔ ملزمان کے فائرنگ سے دو پولیس اہلکار جان بحق ہوگئے تھے۔ جبکہ ملزم کے وکیل نے دلائل میں کہا تھا کہ رینجرز نے ملزم کو 2013 میں گرفتار کرکے جھوٹے مقدمے میں نامزد کردیا تھا۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments