نوشہرہ کینٹ: محبت کی شادی کا درد ناک انجام ،میاں بیوی کو قتل کردیا گیا

مقتول کے بھائی کی مدعیت میں دونوں نامزد ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا

جمعہ 16 جولائی 2021 23:48

نوشہرہ کینٹ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 16 جولائی2021ء) نوشہرہ محبت کی شادی درناک داستان،افغان دوشیزہ شندانہ کو محبت کی شادی کے جرم میںغیرت کے نام پر قتل کے بعد اس سے شادی کرنے والے 24سالہ نوجوان کو بھی فائرنگ کرکے موت کے گھاٹ اتار دیاگیا۔خاندانیذزائع کے مطابق مقتول 24سالہ راج محمد عرف راجہ سے شندانہ کی مس کال پر بننے والی دوستی محبت میں تبدیل ہوگئی تھی ۔

افغان خاندان نے شندانہ کے رشتہ دینے سے انکار کیا تو دونوں نے جینے مرنے کی قسم کھالی۔شندانہ گھر سے فرار ہوگئی۔ڈسٹرکٹ کورٹ نوشہرہ میں کورٹ میرج کرلی۔پولیس تھانہ نوشہرہ کلاں کے مطابق مقتول راج محمد عرف راجہ ولد میرافضل خان سکنہ کھنڈر کو گزشتہ شب موٹرسائیکل سوار حاجی سرور اور مومین سکنہ افغانستان نے گھر کے قریب جی ٹی روڈ کھنڈر کے مقام پر اندھا دھند فائرنگ کرکے موت کے گھاٹ اتار دیا۔

(جاری ہے)

ملزمان ارتکاب جرم کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔قاضی حسین احمد میڈیکل کمپلکس نوشہرہ میں پوسٹ مارٹم کے بعد مقتول کی نعش ورثا کے حوالے کردی گئی۔مقتول کے بھائی کی مدعیت میں دونوں نامزد ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا۔مقتول کے خاندانی رزائع نے نام نہ بتانے کی شرط پر بتایا کہ مقتول نے ایک سال قبل افغان دوشیزہ شندانہ سے محبت کی شادی ڈسٹرکٹ کورٹ نوشہرہ میں کی ۔

شندانہ ہمارے گھر میں بہت خوش تھی دونوں بہت اچھی زندگی گزار رہے تھے ۔چھ ماہ قبل شندانہ بیمار ہوگئی مقتول راج محمد عرف راجہ اس کو رکشہ میں ہسپتال لے جارہا تھا کہ شندانہ کے بھائیوں حاجی سرور اور مومنین خان سکنہ افغانستان کو گن پوائنٹ پر رکشہ روکا اور زبردستی شندانہ کو آغوا کرکے ساتھ لے گئے۔اور غیرت کے نام پر مار ڈالا ۔مقتول نے بہت کوشش کی مگر کوئی رابطہ نہ ہوسکا ۔گزشتہ روز شندانہ کے بھائیوں ملزمان حاجی سرور اور مومنین خان موٹرسائکل پر آئیں اور اندھا دھن فائرنگ کرکے راج محمد عرف راج کو موت کے گھاٹ اتار دیا

نوشہرہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments