مسلم لیگ ن نے تین اہم اندرونی تحققیات پر پردہ ڈال دیا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعرات اپریل 14:45

مسلم لیگ ن نے تین اہم اندرونی تحققیات پر پردہ ڈال دیا
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔19 اپریل 2018ء) : مسلم لیگ نے تین اہم اندرونی تحقیقات پر پردہ ڈال دیا ہے۔ قومی اخبار میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق حکمران جماعت مسلم لیگ ن نے گذشتہ مہینوں میں کم از کم تین اعلیٰ سطح کی اندرونی تحقیقات پر پردہ ڈال دیا۔ ان میں سے ایک انکوائری ہارس ٹریڈنگ سے متعلق بھی تھی۔ مارچ میں ن لیگ کے صدر شہباز شریف نے وفاداریاں بیچنے والے ارکان کی نشاندہی اور کارروائی کے لیے اندرونی تحقیقات کا حکم دیا لیکن پارٹی میں مزیر صف بندی کے ڈر سے اس تحقیقات کو انجام تک پہنچائے بغیر خاموشی سے ختم کر دی گئی ۔

اس سے قبل فروری میں ن لیگ کی قیادت نے اس بات کا تعین کرنے کے لیے ایک اہم انکوائری شروع کی تھی کہ نواز شریف کو نا اہلی کے بعد اسلام آباد سے لاہور جی ٹی روڈ کی بجائے موٹر وے سے جانے کا مشورہ کس نے دیا تھا ، اس ضمن میں چودھری نثار علی خان کا نام لیا گیا لیکن انہوں نے تردید کر دی تھی۔

(جاری ہے)

حکمران کیمپ سے سامنے آنے والی اطلاعات کے مطابق پارٹی قیادت معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے تاہم اس تحقیقات کی تفصیلات آج تک سامنے نہیں آئیں،اسی طرح گذشتہ سال اکتوبر میں نواز شریف نے انتخابی بل 2017ء میں ختم نبوتﷺ کی شق میں پُراسرار تبدیلی کی چھان بین کے لیے راجہ ظفر الحق کی سربراہی میں وزیر داخلہ احسن اقبال اور موسمیاتی تبدیلی کے وزیر مشاہد اللہ پر مشتمل تین رکنی کمیٹی قائم کی اور 24 گھنٹے میں رپورٹ بھی طلب کی لیکن آج تک رپورٹ سامنے نہیں آئی حالانکہ اس معاملے پر وزیر قانون زاہد حامد کو وزارت سے بھی ہاتھ دھونا پڑا۔

ن لیگ کے قابل اعتماد ذرائع کے مطابق راجہ ظفر الحق کی مرتب کردہ رپورٹ میں کابینہ کی ایک خاتون رکن کو ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے، لیکن کمیٹی کے دو دیگر اراکین نے رپورٹ پر دستخط کرنے سے انکار کرتے ہوئے راجہ ظفرالحق سے رپورٹ میں شامل سخت الفاظ حذف کرنے کا مطالبہ کیا جس کے لیے کمیٹی کے سربراہ تیارنہیں۔ کمیٹی کے دو ارکان کے دستخط نہ ہونے کے باعث کمیٹی کی رپورٹ جاری نہ ہو سکی۔ اس حوالے سے جب راجہ ظفر الحق سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے دو ارکان کے دستخط نہ کرنے کی تصدیق یا تردید کرنے سے گریز کیا اور وہ رازداری کے تقاضے کے باعث تفصیلات بھی نہیں بتا سکتے۔