بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں بربریت کی انتہا کر دی ‘مسئلہ کشمیر زمین کے ٹکڑے کا تنازعہ نہیں ڈیڑھ کروڑانسانوں کے حق خودارادیت کا مسئلہ ہے‘

جب تک کشمیریوں کو ان کا پیدائشی حق خودارادیت نہیں مل جاتا کشمیری اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے سابق معاون خصوصی وزیراعظم آزادکشمیرچودھری محمداشرف کی بات چیت

جمعہ اپریل 20:41

میرپور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) سابق معاون خصوصی وزیراعظم آزادکشمیرچودھری محمداشرف نے کہاکہ بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں بربریت کی انتہا کر دی ہے۔۔مسئلہ کشمیر زمین کے ٹکڑے کا تنازعہ نہیںبلکہ ڈیڑھ کروڑانسانوں کے حق خودارادیت کا مسئلہ ہے۔جب تک کشمیریوں کو ان کا پیدائشی حق خودارادیت نہیں مل جاتا کشمیری اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے ۔

سرچ آپریشن کے دوران مقبوضہ کشمیر میں چادر و چار دیواری کا تقدس پامال کیا جا رہا ۔ جعلی مقابلوں میں کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا جا رہا ہے۔عالمی برادری بھارتی فوج کے ظلم و ستم کا نوٹس لے ۔۔بھارتی جبر و ظلم سے کشمیریوں کی تحریک کبھی سرد نہیں ہوئی کشمیر آزاد ہو کر رہے گا۔عالمی طاقتوں نے اگر مسئلہ کشمیر کے زمینی حقائق کو سامنے رکھتے ہوئے اس کا کوئی باوقار اور پرامن حل نہ نکالاتو جنوبی ایشاء کاامن تباہ وبرباد ہوجائے گا اور اس کے اثرات پوری دنیاکے امن پر مرتب ہونگے۔

(جاری ہے)

پوری کشمیری قوم پاک فوج کے ساتھ کھڑی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوںسے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔چودھری محمداشرف نے کہا بھارت کشمیر یوں کی نسل کشی کر کے اپنا ناجائز قبضہ جمانے میں مصروف ہے کشمیریوں کی دی گئی قر بانیاں رائیگاں نہیں جائیں گئیں آزادی کشمیریوں کا مقدر ہے ۔انہوں نے کہابھارتی سامراج کشمیریوں سے ان کا پیدائشی حق خودارادیت نہیں چھین سکتا آزادی کشمیریوں کو مل کر رہے گئی۔ کشمیری اور پاکستانی عوام ایک ہیں ۔کشمیریوں کا نصب العین ہی پاکستان ہے۔ پوری کشمیری قوم افواج پاکستان کے ساتھ سیسہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح کھڑی ہے اور کسی بھی مرحلہ پر کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔