تحریک انصاف کے جلسے کے جواب میں لاہور میں 5 جلسے کرنے کا اعلان

آصف زرداری کا لاہور میں پانچ جلسے منعقد کرنے کا اعلان، ہم نے نواز شریف کو حکومت بنانے دی، اس لئے کچھ نہیں کہا کہ جمہوریت چلتی رہے،جب نواز شریف کو اقتدار ملا تو وہ مغل اعظم بن گئے، انہوں نے پیپلز پارٹی سے دوستی کی آڑ میں کھلواڑ کیا،ب سابق نااہل وزیراعظم بڑے پیغامات بھیجتا ہے،نواز شریف کو بلاآخر جیل جانا ہے لیکن اب پتہ نہیں اڈیالا جیل جانا ہے یا لانڈھی جیل، پیپلز پارٹی الیکشن 2018ء آزاد حیثیت میں لڑے گی، سابق صدر کا بلاول ہائوس لاہور میں پارٹی رہنمائوں کے اجلاس سے خطاب

ہفتہ اپریل 20:24

تحریک انصاف کے جلسے کے جواب میں لاہور میں 5 جلسے کرنے کا اعلان
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری نے الیکشن 2018ء سے قبل لاہور میں پانچ جلسے منعقد کرنے کا اعلان کیا ہے، بلاول ہائوس لاہور میں پارٹی رہنمائوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ ہم نے نواز شریف کو حکومت بنانے دی اور نواز حکومت کو اس لئے کچھ نہیں کہا کہ ملک میں جمہوریت چلتی رہے اور جب نواز شریف کو اقتدار ملا تو وہ مغل اعظم بن گئے انہوں نے پاکستان پیپلز پارٹی سے دوستی کی آڑ میں کھلواڑ کیا۔

اب سابق نااہل وزیراعظم انہیں بڑے پیغامات بھیجتا ہے۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ نواز شریف کو بلاآخر جیل جانا ہے۔ اس سلسلے میں اڈیالا جیل کی صفائی کی جا رہی ہے لیکن اب پتہ نہیں کہ نواز شریف نے اڈیالا جیل جانا ہے یا لانڈھی جیل جانا ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی الیکشن 2018ء آزاد حیثیت میں لڑے گی، پیپلز پارٹی نہ تو پاکستان مسلم لیگ (ن) سے ہاتھ ملائے گی اور نہ ہی پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ کوئی اتحاد کرے گی، (ن) لیگی حکمران ملک کو دیوالیہ کر کے چلے جاتے ہیں اور ہم اس ملک کو سنبھالتے ہیں، میاں صاحب نے کسی بھی ملک میں چلے جانا ہے مگر ہم نے ادھر ہی رہنا ہے، میاں صاحب کی سوچ اپنی ذات کے لئے ہوتی ہے۔

(جاری ہے)

جمہوری نہیں ہوتی۔ انہوں نے کہا کہ جب میں نے سابق صدر پرویز مشرف کو ملک سے نکالا تو لوگوں کو کچھ سمجھ نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف ملکی نہیں اپنی طاقت کے بارے میں سوچتے ہیں، شہید ذوالفقار علی بھٹو نے آئین بنایا اور ہم آئین میں 18ویں ترمیم لائے، ہم نے بھارت کے ڈیزائن کو روکنے کیلئے 18ویں ترمیم کی۔